Aanchal Jan-07

ہم سے پوچھئے

شمائلہ کاشف

کشف ایمان … جھمرہ سٹی
س۔ آپ کو نیا سال بہت مبارک ہو۔
ج۔ آپ کو بھی۔
س۔ پہلی بار شرکت کررہی ہوں دل دھک دھک کیوں کررہا ہے؟
ج۔ خوف کی وجہ سے۔
س۔ کیا دوستی میں مجبوری ہوتی ہے؟
ج۔ ہر گز نہیں۔
س۔ جو رشتوں کا بوجھ نہیں اٹھا سکتے انہیں کیا کرنا چاہئے؟
ج۔ رشتے جوڑنا ہی نہیں چاہئے۔
مسز حمیرا ناصر … وہاڑی
س۔ السلام علیکم شمائلہ جی کیا حال ہیں؟
ج۔ الحمد للہ۔ اچھے حال ہیں۔
س۔ شمائلہ جی خیریت یہ آپ اتنی موٹی کیوں ہورہی ہیں میری طرح۔
ج۔ موٹاپا آپ ہی کو مبارک‘ ہمیں معاف رکھیئے۔
س۔ میں آپ کو انوائٹ کررہی ہوں کب آئیں گی؟
ج۔ کبھی نہیں۔ معذرت۔
س۔ اب اجازت خدا آپ کو ہمیشہ مسکراتا رکھے۔ آپ کی لمبی عمر ہو۔
ج ۔آمین۔
سعدیہ ہما شیخ … بہاولپور کینٹ
س۔ ساون کی پھوار اور چاہت کی پھوار میں کیا مماثلت ہے؟
ج۔ ساون کی عارضی‘ چاہت کی دائمی۔
س۔ شوہر کے چہرے کا بلب کب فیوز ہوتا ہے؟
ج۔ جب گھر آئے اور کھانا پکا ہوا نہ ہو۔
س۔ذرا جلدی سے بتائیے۔ جنوری کا مہینہ ہمارا فیورٹ کیوں ہے؟
ج۔ یہ تو آپ نے ہمیں ابھی تک بتایا ہی نہیں۔
س۔ ان کے چہرے پر اکثر ہوائیاں کیوں اڑی رہتی ہیں؟
ج۔ بیوی کے چہرے پر جب ظلم برس رہا ہو تو بے چارے کا کیا ہوگا۔
سُباس گل … رحیم یار خان
س۔ السلام علیکم آپی کیا حال ہے؟ نئے سال اور بقرعید کی ڈھیروں مبارکباد قبول کیجئے۔
ج۔ یہی جواب ہماری جانب سے بھی ہے۔
س۔ نئے سال کی آمد پر ہمیں کوئی اچھی دعا کیا دیں گی؟
ج۔ اللہ آپ کو سلامت رکھے (آمین )۔
ثوبیہ نذیر … فیصل آباد
س۔ آپی ! شہر دل کے دروازے پر کس کلر کا پینٹ کرکے اس کی خوب صورتی کو چار چاند لگائے جاسکتے ہیں؟
ج۔ بے وقوفی کا سوال۔
س۔ آپو ! طاق دل میں جلتے چراغ میں تیل کس طرح ڈالا جاسکتا ہے؟
ج۔ دوسرا سوال بھی احمقانہ !
س۔ ذرا یہ تو بتائیے آپ نے زندگی سے کیا پایا‘ کیا کھویا؟
ج۔ ہمارا معاملہ اللہ تعالیٰ سے ہے۔
س۔ آپی ! آج کل کے دلہے سہرا کیوں نہیں باندھتے؟
ج۔ اچھا کرتے ہیں۔ورنہ گھوڑے لگیں۔
س۔ اگر بجلی اور پہیہ ایجاد نہ ہوتے تو آج دنیا کی ترقی کس نہج پر ہوتی؟
ج۔ یہ آپ کو بھی معلوم ہے۔
نادیہ جہانگیر اینڈ ثوبیہ جہانگیر … آزاد کشمیر
س۔ ڈیئر آپی آپ کو نیا سال بہت بہت مبارک اور اب نئے سال کے حوالے سے سب کو اپنا پہلا پیغام دیں۔
ج۔ یہی پیغام ہے کہ ایک دوسرے کا احترام‘ عزت و محبت کرو۔
س۔ ویسے کیا بات ہے پیغام کی۔ یہ تو بتائیں پچھلا پورا سال ہمارے اور آنچل کے درمیان کشمکش میں گزرا۔ کچھ ایسا طریقہ بتائیں کہ آنچل کے تمام اسٹاف سے ہماری پھر سے پہلی والی بات بن جائے اور تمام ناراضگیوں کا سدباب ہوسکے۔
ج۔ کوئی ناراضگی ہی نہیں ہے۔ آپ کا وہم ہے۔
س۔ آپی پلیز فرحت خالہ سے ہماری طرف سے نئے سال میں معافی مانگ لیں اور انہیں کہیں بچے اکثر غلطیاں کرتے ہیں ان سے ناراض نہیں ہونا چاہئے۔
ج۔ وہ ناراض ہونا جانتی ہی نہیں ہیں۔
کنیز فاطمہ … بورے والا
س۔ آپی اپنی محفل میں خوش آمدید کہئے۔
ج۔ کہہ دیا۔
س۔ آپی انسان اتنا مغرور کیوں ہوتا ہے؟
ج۔ ہر انسان نہیں ہوتا‘ جن کو کچھ زیادہ مل جاتا ہے وہ مغرور ہوجاتے ہیں۔
س۔ آپی اللہ تعالیٰ ہمیں اتنا نوازتا ہے پھر بھی کبھی کبھی ہم اتنا مایوس ہوجاتے ہیں۔
ج۔ اللہ تعالیٰ کے ہر کام میں مصلحت ہوتی ہے۔
س۔ آپی وہ جب بھی میرے سامنے آتا ہے مجھے سب کیوں بھول جاتا ہے بتائیے۔
ج۔ حماقت اور کیا کہئے۔
س۔ آپی آخر میں دعائیں دیجئے۔
ج۔ اللہ تعالیٰ آپ کو ہر آفت و بلا سے بچائے (آمین)
ماہم بدر … سرگودھا
س۔ آپ کی محفل میں بغیر اجازت شرکت کررہی ہوں اس کی معافی بارش کے ساتھ ساتھ اگر ساس صاحبہ بھی تشریف لے آئیں تو کیا کریں؟
ج۔ خوش دلی سے تواضع۔
س۔ آپی وہ جب بھی جنوری میں آتے ہیں ان کے دانت وائلن کے تاروں کی طرح بج رہے ہوتے ہیں اور ٹانگیں کسی سنگر کی طرح کانپ رہی ہوتی ہیں کیوں؟
ج۔ ٹھنڈک برداشت نہیں۔
س۔ آپی میری شادی ہورہی ہے فرار کی کوئی ترکیب بتائیں۔
ج۔ فرار نہیں‘ شکر کرو۔
فوزیہ اسلم فوزی … سندھ
س۔ ڈیئرسٹ آپی ہماری طرف سے نئے سال کی مبارکباد قبول کیجئے۔
ج۔ آپ کو بھی مبارک۔
س۔ آپی ! نئے سال میں انہیں کون سی نئی سزا دوں کہ بالکل۔
ج۔ سزا کی وجہ؟
س۔ آپی ! دوپہر اور سہ پہر میں بنیادی طور پر کیا فرق ہے واضح کیجئے۔
ج۔ دو اور تین کا
س۔ آپی ! وہ خود اپنے آپ کو صاف گو کہتے ہیں فی زمانہ یہ خوبی ہے یا خامی؟
ج۔ آپ نہیں جانتیں؟
س۔ آپی جی ! وہ کل میرے خواب میں آئے اور کہا ؟
ج۔ میرا پیچھا چھوڑ دو۔
س۔ اپیا ! ہیٹر کی حرارت سے انسان زیادہ گرم ہوتا ہے یا غصے سے۔
ج۔ غصے سے۔
س۔ آپی ! کوا منڈیر پرپھر چلا رہا ہے کیا آج پھر…؟
ج۔ خط آئے گا۔
عروسہ شہوار … جہلم
س۔ شمی جی ! دعا ہے نیا سال آپ کے لئے نئی روشنی‘ امید اور خوشی ثابت ہو۔
ج۔ شکریہ اور آمین۔
س۔ یہ خنک رُت یہ نئے سال کا پہلا لمحہ دل کی خواہش ہے کہ …؟؟
ج۔ وہ سہرا باندھ کر آجائیں۔
س۔ تجھ سے فقط یہ کہنا ہے مجھے …؟؟
ج۔ آبھی جا۔
س ۔ دل نکال کر اگر ہتھیلی پر رکھ دے کوئی …؟؟
ج۔ موت واقع ہوگی۔
س۔ محبت صدقہ جاریہ ہے تو پھر بھی کچھ اس میں بخل سے کام لیتے ہیں کیوں؟
ج محبت صدقہ جاریہ کب سے ہونے لگی؟
س۔ بقر عید پر بکرے کے ساتھ ساتھ میری آزادی کی قربانی بھی دی جاتی ہے کیا کروں۔
ج۔ صبر۔
رخسانہ قاسم گل … لیاقت آباد
س۔ کسی ایسی ڈش کا نام بتائیں جس کو پکانے میں کوئی خرچہ نہیں ہوتا …؟
ج۔ خاموش ڈش۔
س۔بقر عید پر آپ کی پسندیدہ ڈش کون سی ہے؟
ج۔ کوئی بھی نہیں۔
س۔ نئے سال کے موقع پر ان کو کیا تحفہ بھیجوں؟
ج۔ دعائوں کا۔
س۔ سردیوں کا موسم امیروں کا موسم کیوں کہلاتا ہے؟
ج۔ ان کے پاس سازو سامان زیادہ ہوتا ہے۔
س۔ آپ کو نیا سال مبارک ہو۔
ج۔ آپ کو بھی ۔
فرح طاہر … جبین آگاہی
س۔ شمی آپی ! آپ کی محفل میں پہلی دفعہ شرکت کررہی ہوں۔ چلئے آپ اب جلدی سے خوش آمدید کہہ دیں۔ اور نیا سال مبارک۔
ج۔ خوش آمدید اور مبارک۔
س۔ شمی آپی ! کہا جاتا ہے میاں بیوی گاڑی کے دو پہیے ہوتے ہیں تو جن کی دو بیویاں ہوتی ہیں۔ وہ کیا ہوتے ہیں؟
ج۔ خود گاڑی بان‘ دو پہیے‘ بیویاں۔
س۔ اپیا ! ذرا بتائیں کہ آپ کیسی ہیں؟
ج۔ اچھے ہیں۔
س۔ آپی ! میں بڑی خوش ہوں بھلا کیوں؟
ج۔ انہوں نے آنے کا وعدہ کرلیا ہوگا۔
س۔ کسی بہانے سہی اس سے گفتگو کرلیں کہ وہ جواب تو دے گا کسی سوال کے بعد۔
ج۔ گفتگو کرنے کی ضرورت ہی کیا ہے۔
حنا کنول … حویلی لکھا
س۔ آپی جان ہمیں اکثر وہی لوگ کیوں یاد آتے ہیں جنہیں ہم بھولنے کی کوشش کرتے ہیں۔
ج۔ گھسا پٹا سوال۔
س۔ اپیا جی جب کوئی جان سے پیارا دوست کسی بات پر خفا ہوجائے تو ایسے میں کیا کرنا چاہئے؟
ج۔ منالینا چاہئے۔
س۔ مخلص دوست کی پہچان کیا ہے؟
ج۔ اپنے آپ سے پوچھو۔
شیبا صابر بٹ … اوکاڑہ سٹی
س۔ کبھی الوداع نہ کہنا؟
س۔ چاند سفارش جو کرتا ہماری؟
س۔ عجیب داستاں ہے یہ؟
س۔ حسن کو چاند جوانی کو غزل کہتے ہیں؟
س۔ چاند‘ تارے‘ پھول و شبنم تم سے اچھا کون ہے؟
ج۔ سارے جواب ایک ساتھ (احمق!!)
نازش خان زشی … عارف والا
س۔ پیاری پیاری آپی شمائلہ کاشف آداب عرض کرتی ہوں۔ نیا سال مبارک ہو آپ کو۔
ج۔ آپ کو بھی مبارک اور پیار۔
س۔ ڈیئر آپی ذرا بتائیں آپ کے خیال میں 2006 کیسا رہا؟ آپ کے لئے اور اہل وطن کے لئے؟
ج۔ آپ کس دنیا میں تھیں۔ آپ کو نہیں معلوم۔
س۔ آپی جان آپ کے مزاج میں اتنی زیادہ شگفتگی کہاںسے آئی؟
ج۔ اللہ تعالیٰ کی طرف سے دی گئی محبت کی وجہ سے۔
س۔ شمائلہ جی مجھے آپ کا انداز اتنا کیوں پسند ہے؟
ج۔ اس کا کیا جواب دیں۔
چندا مثال … ضلع قصور
س۔ آپی السلام علیکم ! پہلی بار آپ کی محفل میں آئے ہیں کیسا لگا؟
ج۔ خوش آمدید۔ اچھا لگا۔
س۔ آپی ! آنچل سے وابستہ سب اپنے اپنے سے کیوں لگتے ہیں؟
ج۔ اپنے ہیں‘ اس لئے۔
س۔ آپی ! آنچل ہم چوری چوری پڑھتے ہیں کسی دن چوری پکڑی گئی تو کیا ہوگا؟
ج۔ جو بھی ہوگا ہمیں لکھ بھیجئے گا۔
س۔ آپی ! بہت خوش رہنے کے باوجود غم خوشی میں تبدیل کیوں نہیں ہوتا پلیز ضرور بتائیے گا۔
ج۔ اللہ تعالیٰ کا حکم سمجھو گی تو تبدیل ہوجائے گا۔
س۔ آپی ! آپ اچھی ہیں‘ بہت اچھی ہیں یا بہت ہی اچھی ہیں؟
ج۔ خود ستائشی کا مرض نہیں۔
س۔ آپی ! ہم کو آپ سے ملنے کا بہت اشتیاق ہے کہ آپ بھی ہم سے ملنا چاہتی ہیں ضرور بتائیے گا؟
ج۔ ہم تحریری تعلق رکھتے ہیں۔
س۔ زندگی رہی تو پھر ملاقات ہوگی انشاء اللہ‘ اللہ حافظ۔
ج۔ انشاء اللہ۔
ثوبیہ جہانگیر … آزاد کشمیر
س۔ ہیلو آپی ! سنائیے کیسی گزری عید؟
ج۔ شکر خدا کا۔
س۔ کبھی پرجوش ہوکے بھی جواب دے دیا کیجئے۔
ج۔ سوال کا جواب دیتے ہیں نا۔
س۔ آپی ! اگر کبھی کوئی لڑکا اپنی محبوبہ کو سرخ گلاب کی جگہ ہری مرچ تحفہ میں د ے تو کیا ہوگا؟
ج۔ وہ محبوبہ کو طوطا سمجھتا ہوگا۔
س۔ انسان آسمان کو چھو کر چاند پر پہنچ گیا ہے لیکن اسے زمین پر رہنا ابھی تک کیوں نہیں آیا؟
ج۔ زمین پر آپ کو رہنا آگیا؟
س۔ ڈیئر آپی ! سب سے مقدس مضبوط رشتہ میاں بیوی کا ہے لیکن اسے کچے دھاگے کی طرح کیوں کہا جاتا ہے؟
ج۔ لمحوں میں ٹوٹ جانے کی وجہ سے
س۔ شوہر کے دل میں اپنی بیوی کے لئے کیاہو نا ضروری ہے محبت یا عزت؟
ج۔ عزت‘ عزت ہوگی تو محبت بھی لازمی ہوگی۔
نوشین اقبال … گائوں بدر مرجان
س۔ اپیا ! زندگی کی حقیقی خوشیوں سے کیسے ہمکنار ہوا جاسکتا ہے؟
ج۔ دوسروں کو خوشیاں دے کر۔
س۔ اپیا ! شہر دل میں اس قدر ویرانی کیوں ہے؟
ج۔ اس کی وجہ آپ ہمیں بتائیں۔
س۔ اپیا ! انسان کے پاس کیا چیز ہو تو وہ خوش نصیب کہلا سکتا ہے؟
ج۔ محبت‘ عزت‘ شہرت‘ دولت‘ صحت اور ایمان بھی۔
مہوش شاہین … حجرہ شاہ مقیم
س۔ آپی بہت عرصے بعد آپ کی محفل میں آئی ہوں کوئی دعا میرے نام کریں۔
ج۔ اللہ تعالیٰ آپ کو صحت مند رکھے۔
س۔ زندگی میں ہم جن کو اہمیت دیں وہی ہمیشہ ہمارے دل کو چوٹ کیوں لگاتے ہیں؟
ج۔ دل چھوٹا نہ کیجئے‘ اکثر ایسا ہوجاتا ہے۔
س۔ آپی جو ہمیشہ ہمارا اعتبار توڑیں اور ہمارے دل کو ٹھیس پہنچائیں‘ ہم ان پر پھر یقین کیوں کرلیتے ہیں؟
ج۔ یہ بھی انسانی فطرت ہے۔
نرگس جمروز خان … کراچی
س۔ آپی ! پہلی مرتبہ سوئٹ سسٹرز آپ کی محفل میں شرکت کرنے کی اجازت چاہتی ہیں۔ اجازت تو دیجئے۔
ج۔ اجازت ہے۔
س۔ آپی ہم امیدیں کیوں وابستہ کرلیتے ہیں؟
ج۔ بغیر امید کے انسان کیسے رہ سکتا ہے۔
س۔ آپی ہم کس رشتے میں سب سے زیادہ جھوٹ بولتے ہیں؟
ج۔ اپنی غرض کے رشتے میں۔
س۔ زندگی ایک معمہ ہے جس کو حل کرنا پڑتا ہے کیا یہ سچ ہے؟
ج۔ زندگی کوئی معمہ نہیں۔
س۔ آپی ہمیں کسی بھی رشتے کی بنیاد کن باتوں پر رکھنی چاہئے۔
ج۔ نیک نیتی پر۔
س۔ آپی آنچل کے تمام لکھنے والوں کو کوئی اچھی سی دعا دیں۔
ج۔ اللہ تعالیٰ سب کو خوش رکھے (آمین )
لولی فرینڈز … کراچی
س۔ آپی بتائیں کہ رشتہ بنانا اور نبھانا آسان ہے کہ مشکل؟
ج۔ آسان ہے اگر ظرف ہو تو۔
س۔ آپی کوئی آپ کو پیار سے بلائے تو کیا ہم آپ کو یاد آئیں گے؟
ج۔ کیوں نہیں۔
س۔ آپی سب سے بہترین دعا کیا ہے؟
ج۔ اللہ تعالیٰ ایمان کی دولت سے نوازے۔
س۔ آپی جی جھوٹ حقیقتاً ہے کیا؟
ج۔ سچائی سے انکار۔
س۔ آپی کوئی اچھی سی نصیحت تو کریں۔
ج۔ کبھی جھوٹ نہ بولیں۔
س۔ آپی جی کون سا رشتہ نبھانا سب سے زیادہ مشکل ہے؟
ج۔ جس میں محبت نہ ہو۔
سمیرا کنول … خانیوال
س۔ شمائلہ جی آپ نے عید کس کے ساتھ منائی اور کیسی منائی اور کیا نام ہے ان کا؟ سچ سچ بتائیں۔
ج۔ ہم نے عید نہیں منائی۔
س۔ اگر انسان کے دوست ہی ان سے دور ہوں تو ان کی عید کیسی ہوتی ہے؟
ج۔ اچھی نہ ہوگی۔
س۔ اگر انسان کے دل میں ہزاروں ایسی خواہشیں ہوں جو کہ اسے معلوم ہوں کہ یہ نہیں پوری ہوسکتیں لیکن وہ پھر بھی خدا کو یاد کرکے کوشش کرتا رہے کیا وہ کامیاب ہوسکتا ہے؟ اس سوال کا جواب ضرور دیں۔
ج۔ ہاں ! اللہ تعالیٰ سے امید نہ توڑو‘ اسی میں کامیابی ہے۔
س۔ باجی سنا ہے کہ بڑا بھائی باپ کی جگہ ہوتا ہے اور بڑی بہن کس کی جگہ ہوتی ہے؟
ج۔ ماں کی۔
س۔ باجی میر ے احمقانہ سوالوں کا ضرور جواب دیجئے گا۔ میں آپ کو پہلا خط لکھ رہی ہوں اگر آپ نے جواب نہ دیا تو آئندہ سے آپ کا آنچل پڑھنا بھی چھوڑ دوں گی۔
ج۔ آپ کے ان احمقانہ سوالوں کا جواب دے دیا۔
ماہم اسلم … جتوئی
س۔ آپی ! آپ کو میری طرف سے عید کی خوشیاں مبارک ہو۔
ج۔ شکریہ۔
س۔ آپو ! اس عید پر آپ سے مجھے کیا ملے گا؟
ج۔ دعا۔
س۔ اپیا ! کیا ہر رشتہ قابل اعتبارہوتا ہے؟
ج۔ تقریباً۔ انسان اگر بہتر ہو تو۔
س۔ آپو ! وہ مجھے بہت اچھا لگتا ہے لیکن ایک مسئلہ ہے کہ وہ ملتا دیر سے ہے بھلا کون؟
ج۔ آنچل۔
س۔ عید کیا صرف خوشیاں حاصل کرنے کا نام ہے؟
ج۔ ہاں۔
ناجیہ ملک … چناری آزاد کشمیر
س۔اپیا ڈیئرآنچل کی ٹائٹل گرل کے سر پر آنچل کیوں نہیں ہوتا ۔
ج۔ اب کس کے ہوتا ہے۔
س۔ اپیا ڈیئر آنچل میں آپ کا پسندیدہ سلسلہ کون سا ہے؟
ج۔ آپ سے سلام دعا کا۔
بشریٰ بدر گل … کراچی
س۔ السلام علیکم ! شمی آپی کیسی ہیں آپ؟
ج۔ شکر ہے خدا کا۔
س۔ دسمبر کا مہینہ اتنا اداس اداس کیوں ہوتا ہے؟
ج۔ ٹھنڈک کی وجہ سے۔
س۔ آپی ! دنیا میں اور ہم میں پیار‘ محبت اور خلوص کی کمی کیوں ہوتی جارہی ہے؟
ج۔ خود غرضیوں کی وجہ سے۔
س۔ آپی ! لوگ اپنے لفظوں سے نازک دلوں کو توڑدیتے ہیں اور پھر بھی ان جان رہتے ہیں … آخر کیوں؟
ج۔ بے درد ایسے ہی ہوتے ہیں۔
س۔ آپی ! ہم پر خلوص دوستوں کی تلاش میں رہتے ہیں خود مخلص دوست بننے کی کوشش کیوں نہیں کرتے؟
ج۔ آپ کر ڈالیئے۔ دوسروں کو چھوڑئیے۔
س۔ زندگی کیا ہے …؟ (ایک جملے میں وضاحت کریں )۔
ج۔ زندگی نام ہے مر مر کے جئے جانے کا۔
س۔ آپی ! اب میں جارہی ہوں‘ مگر اگلے مہینے ضرور آئوں گی۔آپ انتظار کریں گی نا …؟
ج۔ کرلیں گے۔
س۔ اللہ حافظ۔
ج۔ فی امان اللہ
سنیہا سسٹرز … گلشن اقبال
س۔ آپی جی ذرا بتائیں تو اس بار عید کا چاند دیکھ کر ہم نے کیا دعا مانگی؟
ج۔ یہ ہم بتائیں۔
س۔ آپی جی چوڑیاں‘ مہندی‘ کاجل‘ بندیا ان سب چیزوں کو دیکھ کر آپ کیا محسوس کرتی ہیں؟
ج۔ نظروں کو اچھی لگتی ہیں اور بس۔
س۔ آپی سنیہا سسٹرز میں سے کسی ایک کی مستقل عیدی کا سلسلہ چلنے والا ہے کوئی دعا ہی دے دیں۔
ج۔ اللہ تعالیٰ سلسلہ جلد سے جلد چلا دے آمین۔
س۔ آپی جب کوئی ہماری تعریف کرتا ہے تو ہم بری طرح شرما جاتے ہیں آخر کیوں ؟
ج۔ شرم عورت کا زیور ہے۔
س۔ ہاں آپی جی ضروری بات آپ کو ہماری طرف سے عید کی ڈھیروں مبارکاں! مبارکاں!
ج۔ آپ کو بھی مبارک۔
فرزانہ انصاری … صادق آباد
س۔ شہلا جی ! میں پریشان ہوں کہ آپ کو سوئیٹ گرل کہہ کر پکاروں یا سوئیٹ وومن؟ پلیز جلدی سے بتائیے مجھے۔
ج۔ جو آپ کا دل چاہے۔
س۔ شہلا جی ! عید مبارک۔ عید کا گفٹ پیک میری طرف سے آپ کے لئے۔ کھولئے اور بتائیے کہ گفٹ کیسا لگا؟
ج۔ بہت اچھا لگا۔ خوب صورت کتاب تھی۔
س۔ لوگ کہتے ہیں کہ ’’عید بچوں کی ہوتی ہے‘‘ یا ’’عید امیروں کی ہوتی ہے‘‘ لیکن میرا کہنا ہے کہ عید تو جو فرد بھی محسوس کرے صرف اسی کی ہوتی ہے۔ آپ کا کیا خیال ہے؟
ج۔ جوآپ کا خیال ہے۔
عاصمہ گیلانی … ملک وال
س۔ سامنے بیٹھ کر اگر کوئی دل چراکر لے جائے تو !!
ج۔ ہمیشہ یہی ہوتا ہے‘ اوٹ سے کون چراتا ہے۔
س۔ شمائلہ جی !ماں کے قدموں تلے جنت ہے اور بیوی کے قدموں تلے؟
ج۔ راحت !
س۔ شمائلہ ! اچھی سی دعا دیں جس میں تمام دعائیں سمٹ آئیں !
ج۔ اللہ تعالیٰ آپ کو زمین و آسمان کی آفات سے محفوظ رکھے (آمین )۔
سدرہ سحر عمران … کراچی
س۔ ہائے آپی ! کہئے کیسے مزاج ہیں؟ عید پر ہمیں یاد کیا تھا یا نہیں؟
ج۔ بغیر عید کے بھی کرتے رہتے ہیں۔
س۔ آہ ! حسرت ان غنچوں پہ جو بن کھلے مرجھا گئے‘ کسی نے سوکھے منہ بھی ہمیں ’’عیدمبارک‘‘ نہیں کہا؟ یہ لوگ اتنی جلدی ’’بھلا‘‘کیوں دیتے ہیں آپی؟
ج۔ اسی کو دنیا کہتے ہیں۔
س۔ آپی جلے دل کے پھپھولے پھوڑنے کو جی چاہ رہا ہے مگر…
اک لمحہ ملا تھا کہنے کو
پوری زندگی کی بات کیا کرتے
ج۔ صبر کر جائو۔
س۔ آپ کی نظر میں خوب صورتی کیا ہے؟
ج۔ خوب سیرتی۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Check Also

Close
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close