Aanchal May 15

سرگوشیاں

مدیرہ

السلام علیکم و رحمتہ اللہ و برکاتہ
مئی ۲۰۱۵ء کا شمارہ سالگرہ نمبر ۲ آپ کے ہاتھوں میں ہے۔ اللہ تعالیٰ کا شکر و احسان ہے کہ اس نے ہمیں یہ دن دیکھنا نصیب کیا۔ آپ کے آنچل نے اپنی حیات کے سینتیس (۳۷) سال مکمل کرلیے۔ اسے اس کی منزل تک پہنچانے میں جہاں اللہ تعالیٰ کا کرم اور فضل شامل ہے وہیں آپ لکھاری بہنوں کی محنت اور قاری بہنوں کی محبت بھی ہمارے سنگ رہی ہے۔ ورنہ تو اس طویل عرصے میں کتنے ہی اچھے اچھے ناموں سے جرائد سامنے آئے اور آکر چلے بھی گئے ان میں اگر کمی تھی تو صرف اللہ کے فضل و کرم کی۔
آپ کی دعا اور تعاون کے سائے میں آپ کا ادارہ آنچل اپنے نئے ماہنامہ حجاب کا جلد ہی اجرا کر رہا ہے اس سلسلے میں پہلے بھی آپ کی خدمت میں گزارش کی جا چکی ہے کہ لکھاری بہنیں اپنی پر اثر خوب صورت تحریریں اور قاری بہنیں اپنی آرا، تجاویز ارسال کرنا شروع کردیں تاکہ حجاب کو سجانے سنوارنے کا کام جلد از جلد شروع کیا جاسکے۔ جس طرح آنچل آپ کے تعاون کے بغیر ادھورا ہے اسی طرح حجاب کو بھی آپ کے بھرپور تعاون کی شدید ضرورت ہے تمام قاری بہنوں سے التماس ہے کہ وہ اپنے قریبی ایجنٹ یا ہاکر جس سے وہ آنچل ہر ماہ حاصل کرتی ہیں انہیں حجاب کے لیے بھی تاکید کردیں تاکہ تمام ایجنٹ حضرات ادارے کو اپنی طلب سے بروقت آگاہ کرسکیں۔
میں اور ادارے کے تمام ہی ساتھی ان تمام قاری بہنوں کے تہہ دل سے شکر گزار ہیں جن بہنوں نے سالگرہ کے موقع پر مبارک باد کے پیغامات اور تحائف ارسال کیے یہ آپ کا آنچل سے جڑا تعلق ہی ہے کہ آپ اپنی تحریروں کے ذریعے اپنے قلبی جذبات و احساسات کا اظہار کرتی ہیں۔ آپ کا شکریہ امید ہے کہ آپ ’’حجاب‘‘ سے بھی اپنا تعلق یوں ہی مضبوط کریں گی۔
اس ماہ کے ستارے
محبت ایسا نغمہ ہے
اقدار و روایات کی پاسداری کرتی اقرا صغیر کی خوب صورت تحریر۔
کاش آنکھیں پڑھا کرے کوئی
آنکھیں بولتی ہیں، گفتگو کرتی ہیں، لیکن ان کی زبان صرف صاحب دل ہی سمجھتے ہیں ان کی گہرائیوں اور گیرائیوں تک پہنچنے کے لیے آپ کا حساس ہونا ضرور ی ہے۔ نازک جذبوں اور احساسات سے مزین عائشہ ناز کی ایک خوب صورت تحریر۔
محبت اب بھی باقی ہے
محبت کی منکر ایسی لڑکی کی تحریر جس کے بے بنیاد خدشات سب کچھ لے ڈوبے تھے۔
انما الاعمال بالنیات
نیت صاف منزل آسان کے سانچے میں ڈھلا سویرا فلک کا موثر افسانہ۔
ذرا سی بات
زیب داستاں کے لیے ذرا سی بات کو کیسے طول دیا گیا ۔ عتیقہ ملک کے افسانہ میں پڑھیے۔
آنچل
آنچل کی حسین قوس و قزح کو سمیٹے حمیرا علی مخصوص انداز میں۔
بند محبتوں کے
نفرتوں کے سیلاب میں بند محبتوں کے کیسے ٹوٹتے ہیں۔ حیا بخاری کا موثر افسانہ۔
باپ پر پوت
مکافات عمل جب سامنے ہو تو سوائے پچھتاوے کے کچھ ہاتھ نہیں آتا۔
زندگی پھولوں کی راہ گزر
نک چڑھی حسینہ کی زندگانی آنچل نے کیسے سنواری آپ بھی جانیے فرح طاہر کی زبانی۔
تیرے کنول میرے گلاب
سمیرا غزل کا مختصر افسانہ آپ کی سوچ کے نئے در وا کردے گا۔

Show More

Check Also

Close
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close