Aanchal Apr 19

بیاضِ دل

میمونہ رومان

شازیہ اخترشازی… نور پور
یقیں اس کو نہیں آتا وضاحت میں نہیں کرتا
گزرجائے گی ساری عمر شاید امتحانوں میں

فریدہ فری… لاہور
کتنی سردی ہے پاس کچھ بھی نہیں
آئو اک دوسرے کو اوڑھ لیں ہم

ابیہا رضوان… کراچی
آئے تو یوں کہ جیسے ہمیشہ تھے مہرباں
بھولے تو یوں کہ گویا کبھی آشنا نہ تھے

سباس گل… رحیم یار خان
آئو دیکھو خدا کی بستی میں
کس قدر قحط ہے محبت کا

تبسم بشیر حسین… ڈنگہ
خواب کیسے بسے گئے آنکھوں میں
اپنی آنکھیں ہی نوچ لیں میں نے
کوئی راہ فرار سوجھی ہی نہیں
ساری ترکیبیںسوچ لی میں نے

ارم کمال… فیصل آباد
ہیں غنیمت یہ چار لمحے بھی
پھر نہ ہم ہیں نہ یہ تماشا ہے
زندگی ایک دکان کھلونوں کی
وقت بگڑا ہوا سا بچہ ہے

انعم زہرہ… ملتان
شب بھر کو تیری یاد میں جاگی ہوئی آنکھیں
اور فرقتِ غم میں برستی ہوئی آنکھیں
جس دم میری آنکھوں سے بہے آنسو تیری خاطر
تب شکر کے سجدے کو جھک گئیں میری آنکھیں

کرن شہزادی… ما ہنسرہ
تیرے نام کی جو روشنی تھی اسے خود ہی تو نے بجھادیا
نہ جلاسکی جسے دھوپ بھی اسے چاندنی نے جلادیا
میں ہوں گردشوں میں گھرا ہوا مجھے آپ اپنی خبر نہیں
وہ جو شخص تھا میرا رہنما، اسے راستوں نے گنوا دیا

انیلا طالب… گوجرانوالہ
یوں جرم کی سزا دیتی ہے دنیا
ہنستے ہوئے چہروں کو رلادیتی ہے دنیا
مرنے کی تمنا ہو تو مرنے نہیں دیتی
جیتے ہیں تو جینے کی سزا دیتی ہے دنیا

نایاب زہرہ… جڑانوالہ
کس قدر انوکھا ہے رابطہ محبت کا
کب نہ جانے ہوجائے معجزہ محبت کا
اپنی ذات سے بھی وہ اجنبی لگتا ہے
جس کے ساتھ ہوجائے حادثہ محبت کا

شبنم دل اینڈ حمیرا نذیر… مانسہرہ
رسم سجدہ بھی اٹھادی ہم نے
عظمت عشق بڑھا دی ہم نے
دل کو آنے لگا بسنے کا خیال
آگ جب گھر کو لگا دی ہم نے

راؤ تہذیب‘حسین تہذیب…رحیم یار خان
زندگی میں نے تجھے آخر بسر کر ہی لیا
دیکھ لے کتنا بھروسا ہے میرا اللہ پر

پروین افضل شاہین… بہاولنگر
ہم سے ہوتے نہ وہ گناہ کبھی
جو ہوئے نیکیاں کمانے میں

منسور بیگم… لاہور
ہر سو ہجر کے مارے لوگ
گھوم رہے ہیں سارے لوگ
اس دھرتی کو چھوڑ گئے ہیں
فری کتنے پیارے لوگ

سیدہ لوبا سجاد… کہروڑ پکا
کیا زمین، کیا آسمان کچھ بھی نہیں
ہم نہ ہوں تو یہ خیال کچھ بھی نہیں
دیدہ و دل کی رفاقت کے بغیر
فصل گل ہو یا خزاں کچھ بھی نہیں

کوثر خالد … جڑانوالہ
اٹھ جاتا جو وفا کی مسند سے
اپنے دل سے اتر گیا ہوتا
چھوڑ جاتا جو تیری گلیوں کو
کون جانے کدھر گیا ہوتا

صائمہ سکندر سومرو… حیدر آباد
جون ہم زندگی کی راہوں میں
اپنی تنہا روی کے مارے ہیں

رائو تہذیب حسین تہذیب… رحیم یار خان
چار سو میرے گرچہ رونقیں تو ہیں لیکن
باوجود ان سب کے میں مگر اکیلا ہوں
زندگی کے میلے میں روٹھنے سے کیا حاصل
تم ادھر اکیلے ہو میں ادھر اکیلا ہوں

راشد عطاری… عارف والا
میری طرح ذرا بھی تماشا کیے بغیر
رو کر دکھائو آنکھ کو گیلا کیے بغیر

سحر تبسم سحری… مغل پورہ
دکھ یہ نہیں کہ میں اسے اپنا نہ سکا
دکھ تو یہ ہے کہ وہ بھی کسی کا نہ ہوا

مہر نزاکت مہری… گجرات
اڑگیا رنگ راہ گزاروں کا
قافلہ بجھ گیا چناروں کا
اوڑھ کر زرد موسم کی ردا
آئو ماتم کریں بہاروں کا

شزا بلوچ… جھنگ صدر
لوگ کہتے ہیں خاموشیاں بولتی ہیں
میں عرصے سے خاموش ہوں اور وہ برسوں سے بے خبر

سحر گلزار… کوٹلی گجرات
مختصر یہ ہے کہ دو لفظوں سے بن جاتا ہے دل
ہے وسیع اتنا کہ اس میں دو جہاں کا راز ہے

مشعال… بھیر کنڈ مانسہرہ
یوں تو کچھ غلط بھی نہیں ہوتے چہروں کے تاثرات
لوگ ویسے ہوتے بھی نہیں جیسے نظر آتے ہیں

فریال جنید… نواب شاہ
زندگی مختصر ملی تھی ہمیں
حسرتیں بے شمار لے کے چلے

نور المثال شہزادی… قصور
اس نے دیکھا تھا کس نظر سے مجھے
دل میں گویا سما گئی آنکھیں

ثناء جویریہ… کراچی
توڑ گئے پیمان وفا اس دور میں کیسے کیسے لوگ
یہ مت سوچ قتیل کہ بس یار تیرا ہرجائی ہے

جویریہ وسمی… ڈونگہ بونگہ
مٹی میں ملا دیتی ہے ہنستے ہوئے چہرے
تقدیرکو رشتوں کی پہچان کہاں ہے

اریشہ راج… ٹمن تلہ گنگ
دل تو پھر دل ہے کسی طور بہل جائے گا
میری آنکھیں تیری چاہت کی سزا کاٹیں گی

وقاص عمر… بنگڑنو حافظ آباد
آگ بجھتی نہیں آنسوئوں سے
ریت میں پھول کھلتے نہیں ہیں
پچھلی رتوں کے بچھڑے مسافر
اگلی راہوں میں ملتے نہیں ہیں

گہنا ناز… قصور
فطرت سے ہوں مجبور میں دھوکا نہیں دیتا
اس بار مگر خلوص بہت مہنگا پڑا مجھے

دعا انمول… حافظ آباد
اس نے کس طرح بدل ڈالا ہے نقشہ میرا
میرا چہرہ بھی نہیں لگتا ہے چہرہ میرا
ہے اس شخص سے حددرجہ محبت دل کو
جس کے رستے سے بھی ملتا نہیں رستہ میرا

تحریم ملک…میانوالی
یوں تو ہر شخص اکیلا ہے بھری دنیا میں
پھر بھی ہر دل کے مقدر میں نہیں تنہائی

فریدہ بشیر… بہاولنگر
ہمارے حسن نظر کی کرشمہ سازی ہے
کہ جس کو پیار سے دیکھا وہ بے مثال ہوا

سالگرہ مبارک

Show More
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close