Aanchal Apr-18

ہم سے پو چھئے

شمائلہ کاشف

ارم کمال…فیصل آباد
سوال: شمائلہ جی! یہ کیا بات ہے ساجن کے آتے ہی گوری سنگھار کرنے بیٹھ جاتی ہے‘ اسے ساجن کے کھانے پینے کی کوئی فکر نہیں؟
جواب: اس کا ہار سنگھار دیکھ کر ہی تو ساجن کھانا پکائے گا‘ ویسے یہ گوری کہیں تم ہی تو نہیں؟
سوال: یہ کڑوڑ پتی شوہر شادی کے بعد لوڈ پتی کیسے ہوجاتے ہیں؟
جواب: تم جیسی بیویاں پہلے جیبیں خالی کرتی ہیں بعد میں معصوم بن کر ایسے سوال کرتی ہیں‘ تو جواب بھی تم ہی بتادو۔
سوال: شیشہ ہو یا دل آخر ٹوٹ جاتا ہے‘ ایسا کیوں ہوتا ہے؟
جواب: سنبھالنے والا مشکل سے سنبھال پاتا ہے۔
سوال: جلدی سے بتادیں کہ نعمت زحمت کب بنتی ہے؟
جواب: جب حد سے تجاوز کرجائے۔ اب خود پر مت لینا۔
سوال: اگر زندگی کے سفر میں حادثات کے اسپیڈ بریکرز‘ غم کی آندھیاں اور مصائب کی سونامیاں آئیں تو کیا کرنا چاہیے؟
جواب: آنکھیں بند کرکے بیٹھ جائو اور ہوا کے سنگ اڑتی جائو۔
انیقہ احمد…کوٹ سارنگ
سوال: آپی پہلی بار آئی ہوں‘ گلاب کے پھولوں سے ویلکم کریں۔
جواب: خوش آمدید‘ اب آتی رہنا۔
سوال: آپی یہ پڑھائی ختم کیوں نہیں ہوتی؟
جواب: پڑھائی ختم کرکے تم نے کرکٹ کھیلنی ہے کیا ہاں۔
سوال: اچھی سی دعا دیں اللہ حافظ۔
جواب: خوش رہو… گھر کے کام کاج کرنے کے ساتھ۔
صبا ذرگر…ذکازرگرجوڑہ
سوال: آپی شمائلہ‘ کیا حال ہے‘ آئی ہوپ کہ آپ نے ہمیں یاد کیا ہوگا؟
جواب: یاد تو بہت کیا مگر… اچھا چھوڑو یہ بتائو کیک لائی ہو۔
سوال: آپی لانگ ڈرائیو اتنی لانگ کیوں ہوتی ہے؟
جواب: کبھی گئی بھی ہو لانگ ڈرائیو پہ یا بس ایسے ہی شو مار رہی ہو؟
سوال: آپی آپ غصے میں کیا کرتی ہو میں تو بلکہ ہم دونوں رونا شروع ہوجاتی ہیں۔
جواب: تمہارے روتے دھوتے سوالوں کے جواب دیتی ہوں ورنہ دل تو کرتا ہے…
روشی وفا… ماچھیوال
سوال: خوبصورت سی آنکھیں‘ معصوم سا چہرہ‘ میٹھی سی آواز‘ پیارا سا اخلاق‘ خوش مزاج انداز‘ یہ تو ہوئی میری بات… اور سنائو کیسی ہو آپ؟
جواب: اگر اپنی بات کی تو پھر تم چلتی پھرتی نظر آئوگی‘ چھوڑو یہ بتائو ٹھنڈا‘ گرم کیا لوگی؟
سوال: لوگ دیوانے ہیں بناوٹ کے ہم کہاں جائیں گے سادگی لے کر؟
جواب: آنچل کی محفل میں آئو‘ دل والے لوگ ملیں گے۔
علشبہ نور…بھیرکنڈ
سوال: ویسے آپی آپ کے کڑوے جواب بھی مزہ دیتے ہیں۔
جواب: جب ہی تم کریلے سمجھ کر چٹ کر جاتی ہو۔
سوال: ارے مجھے گھورنا بند کریں‘ نظر لگانے کا ارادہ ہے کیا؟
جواب: تمہیں نظر کون لگائے گا تم تو خود محفل میں نظر بٹوکے طور پر آتی ہو۔
سوال: قارئین متوجہ ہوں‘ آپی چالیس کی ہوگئی ہیں‘ ہنہ آپی۔
جواب: اب گھر جائو تمہاری چالیس سالہ آپی تمہارا بے صبری سے انتظار کررہی ہیں۔
انیلا طالب…گوجرانوالہ
سوال: پیاری حسین سی شمائلہ میرا شنگریلا جانے کو بہت جی چاہتا ہے پر وہ ہے کہاں؟
جواب: تمہاری سسرال کے دائیں طرف۔
سوال: اتنی محبت سے جواب دیتی ہیں کہ ہر بار دل کرتا ہے کہ آپ کی بزم سے جائیں ہی نہ؟
جواب: تم اتنی محبت سے آتی ہو کہ جواب دینے پر مجبور ہوجاتی ہوں۔
سوال: لکھنے کا جی نہ چاہے تو کیسے لکھا جائے؟
جواب: جیسے اپنی کہانیاں لکھتی ہو زبردستی موڈ بنا کر ایسے ہی لکھ دینا۔
سوال: ہمارے گھر کے آگے بیچارا کوا مر گیا ہے اسے دفن ہی نہ کردوں؟
جواب: پہلے یہ تو بتائو مرا کس پر ہے؟
سوال: سروقد درخت ہوا سے پتوں کی مدد سے گیت گار ہے ہیں‘ سورج کی زرد روشنی نے ہمارے گھر کے اونچے اونچے ستونوں کو جگمگا دیا ہے یہ کس وقت کا اشارہ ہے؟
جواب: ایسے وقت کے اشارے ساس کے سامنے کرو۔
سوال: کوے کی نماز جنازہ پڑھوائوں یا نکاح؟
جواب:کوا تم پہ مرا ہے تو نکاح… اگر گاڑی سے مرا ہے تو جنازہ۔
مدیحہ نورین مہک… گجرات
سوال: چشمے والے لڑکے دور سے اتنے خوبصورت کیوں لگتے ہیں؟
جواب: تم لڑکوں پر نظر رکھنا کب چھوڑو گی اب تو سدھر جائو۔
سوال: چوری چوری کوکا کولا کیسے کھولی جائے کہ اس کی آواز سے کسی کو پتہ نہ لگے؟
جواب: سڑی گرمی میں جب سب اپنے کمروں میں ہوں اس وقت چھت پر جاکر۔
سوال: وزن بڑھانے کا کوئی نسخہ بتائیں؟
جواب: تم تو اپنا وزن کم کرو… ایمان سے ہاتھی کے ساتھ کھڑی ہوجائو‘ وہ تمہارے آگے کمزور لگے۔
سوال: عقاب کی مونث عقابی ہے یا عقابنی؟
جواب: یہ تو تم بتائو کیونکہ تمہارے وہ بھی تو عقاب ہیں اور تم ان کی مونث‘ تو کیا ہوئی بھلا؟
سوال: جن کی بیوی جننی اور پری کا شوہر پرا ہوتا ہے کیا؟
جواب: پتا نہیں‘ میں تو شہزادے کی تلاش میں ہوں‘ کوہ قاف والوں کے بارے میں تم اچھی طرح جانتی ہوگی۔
پروین افضل شاہین…بہاولنگر
سوال: پچھلی سالگرہ پر میرے میاں جانی پرنس افضل شاہین نے مجھے لوہے کا بیڈ گفٹ کیا تھا کیا خیال ہے اس بار کیا گفٹ کریں گے؟
جواب: بجری کا تکیہ… سکون سے سونا اس پر۔
سوال: میرے میاں سالگرہ والے دن ہمیشہ مجھ سے ضرور روٹھتے ہیں کس لیے؟
جواب: کیونکہ آپ تیار شیار ہوکر ان سے عمر میں آدھی لگتی ہوں گی اس لیے۔
سوال: سالگرہ کو سالگرہ کیوں کہتے ہیں مال گرہ کیوں نہیں کہتے؟
جواب: مال گرہ کہوگی تو ہر کوئی تم سے پوچھے گا کہاں مال گرا؟
کرن شہزادی…مانسہرہ
سوال: ماشاء اللہ… چشم بدور‘ آپی آج آپ بہت پیاری لگ رہی ہیں اور ینگ بھی۔
جواب: پگلی نظر لگائوگی کیا‘ آج تو محفل میں کوئی نظر بٹو بھی نہیں جسے اپنے ساتھ بیٹھا کر تمہاری نظر سے بچ سکوں۔
سوال: شمائل آپی! آپ کو آنچل کی چالیسویں سالگرہ مبارک ہو۔ بائی دا وے‘ آپ کتنے برس کی ہوگئی ہیں‘ کان میں ہی بتادیں؟
جواب: تمہیں بھی مبارک ہو… تم سے دس سال چھوٹی ہوں اس میں بالکل بھی کوئی شک نہیں۔
سوال: آپی جسے عشق کا ڈینگی کاٹ لے وہ شاعر بن جاتا ہے اور رائٹر کیسے بنتا ہے؟
جواب: ڈینگی کی دوائوں کو وقت پر لے وہ مصنف بن جاتا ہے‘ بشرطیکہ وہ آدمی ہو۔
سوال: آپی کو لاج کہتا ہے… جو اچھا سامع اور کم گو ہو اس کا ہر جگہ اور ہر وقت استقبال ہوتا ہے جبکہ میں نے تو ہمیشہ اس کے برعکس دیکھا ہے۔
جواب: تم اپنے کان کا علاج کرواؤ جو تمہیں اپنی طوطے جیسی آواز سنائی نہیں دیتی۔
رقیہ ناز …وہا ڑی
سوال: آپی شمو! کیسی لگی ہماری انٹری؟
جواب: چڑیا گھر میں نئے جانور کی طرح… خوش۔
سوال: کیا آپ میری سسٹر بنیں گی کیونکہ میری کوئی سسٹر نہیں بلکہ چار عدد بھائی ہیں؟
جواب: جائو کیا یاد کروگی آج سے ہم دونوں بہنیں‘ اب سے میرے حصے کے گھر کے کام بھی تم کرنا بس خوش۔
سوال: آپی جی جس کو ہم خوشی دیتے ہیں وہ بدلے میں غم کیوں دیتا ہے؟
جواب: تم جو خوشی دے کر اس سے بدلے میں پیسے مانگنے لگتی ہو۔
سوال: آپی جی ردی کی ٹوکری میں مت بھیجیے گا اپنا خیال رکھیے گا اللہ حافظ۔
جواب: ردی کی ٹوکری نے تمہارا وزن برداشت نہیں کیا اور باہر پھینک دیا خوش ہوجائو۔
زندگی زروین خالد…پشاور
سوال: سلام کے بعد عرض ہے بڑھیا دادی (اب آیا ناں اونٹ پہاڑ کے نیچے) کہ آپ یہ ہر کسی کو ساس‘ نند کی دھمکیاں کیوں دیتی ہیں‘ اب بھلا دیکھیے ناں‘ سولہویں چاند نے ہمارے آنگن میں جھانکا ہے۔
جواب: آتے ہی جھوٹ کا پہاڑ کھڑا کردیا… شرم تم کو مگر نہیں آتی‘ اب اس پہاڑ پر چڑھ کر پھسل جاؤ گی۔
سوال: سنا ہے بڑی اچھی ’چلے‘ ہیں آپ کے پاس‘ منگنی کے لیے‘ ایک چلا بتادیں۔ پیر منگنی دھم دھمال۔
جواب: میں تو بتادوں گی مگر یہ بتائو چلہ تم کاٹو گی یا تمہاری ساس۔
سوال: ہم آپ کی جھوٹے منہ سے تعریف کردیتے ہیں آپ ہماری کردیجیے… شمائلہ حسین ہے‘ آہ… اللہ اس جھوٹ پہ معافی دیں۔
جواب: آمین‘ اسی پر خوش ہوجائو۔
سوال: یہ تو بتادیں جب پہلی بار چائے میں دودھ کے بجائے ہیڈ اینڈ شولڈر انڈیلا تھا تو مہارانی ساسو نے کیا کہا تھا؟
جواب: یہ پھوہڑ پن کی مثالیں تم اپنی بتاؤ کیونکہ میں تو ہر کام میں طاق ہوں۔
سوال: آپ یہ ہر لطیفے میں پٹھانوں کو کیوں گھسیٹتی ہیں؟ اگر میں نے پٹھان مہم شروع کر ڈالی ناں… تو نہ پھر شمائلہ بچے گی اور نا اس کا راہب خانہ‘ ’’ہم سے پوچھئے‘‘
جواب: چلو تم برا مت مانو‘ آج سے پٹھانوں کی جگہ ڈائریکٹ تمہیں ہی گھسیٹ لوں گی‘ پھر جو حال ہو ناراض مت ہونا۔
سوال: چلیے محترمہ‘ برطانوی طرز کے گھیر دار‘ پائوں کو چھوتے فراک کو پہنے حسینہ عالم اپنے نازک ہاتھوں سے فراک اٹھائے چلتی ہے… اوہ منہ بند رکھے‘ پھر آتی ہوں‘ ’’اللہ پہ امان‘ خادہ شے‘ اللہ دے دا‘ پیر خانہ‘ آبادہ اوساتی‘‘
جواب: ویسے کسی دن یہ سب پہن کر آئینہ ضرور دیکھنا اور پھر اس بندریا کی تصویر ہمیں بھی ارسال کردینا تاکہ تمہاری خوب صورتی سے سب لطف اندوز ہوں۔
شازیہ اختر شازی…نورپور
سوال: اپیا جی ہم پھر آگئے۔
جواب: کوئی بات نہیں لوٹ کے بدھو گھر کو آئے‘ خوش۔
سوال: ہم نے سنا کہ آپ ہمیں بہت مس کررہی تھیں۔
جواب: بالکل… آنچل کی سالگرہ ہے چلو کام سے لگ جائو۔
سوال: جلدی سے بتائو میری دوست کی شادی ہورہی ہے کیا گفٹ دوں؟
جواب: دوستی ختم کردو‘ تمہاری بچت ہوجائے گی اور وہ ساری زندگی خوش رہے گی۔
سوال: میری دوست بنی ہے دلہن‘ پھول کھلے ہیں دل کے…
جواب: کتنا جھوٹ بولتی ہو۔
سمیرا سواتی… بھیرکنڈ
سوال: باادب‘ باملاحظہ بجو جانی پیچھے ہٹیے آپ کی شہزادی تشریف لائیں ہیں۔
جواب: ہاں کوہ قاف کی شہزادی جیسے دیکھ کر ویسے ہی سب بھاگ گئے ہیں۔
پاکیزہ علی…جتوئی
سوال:
ملنے کی غرض ہو تو چلے آتے ہیں اپنوں کی طرح فراز
دل بھر جائے تو جواب دینا بھی گوارا نہیں کرتے لوگ
جواب:
اپنے دل میں اوروں کے لیے وسعت پیدا کر
لوگ مطلب سے نہیں محبت سے ملیں گے
سوال: وہ لوگ جو تم کو کبھی کبھی یاد آئیں
ہوسکے تو مجھے ان میں شمار کرلینا
جواب: کبھی کبھی کی بات تم رہنے دو
ہر شام کے بعد تم یاد آئے…
الحمدللہ مسلسل اشاعت کے چالیس سال مکمل)

Show More

Check Also

Close
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close