Hijaab Mar-18

حمد و نعت

عشرت گودھروی/قمرالدین انجم

حمد باری تعالیٰ
یا رب میری سوئی ہوئی تقدیر جگا دے
آنکھیں مجھے دی ہیں تو مدینہ بھی دکھا دے
سننے کی جو قوت مجھے بخشی ہے خداوند
پھر مسجد نبوی کی اذانیں بھی سنا دے
حوروں کی نہ غلماں کی نہ جنت کی طلب ہے
مدفن میرا سرکار ﷺ کی بستی میں بناد دے
منہ حشر میں مجھ کو نہ چھپانا پڑے یا رب
مجھ کو ترے محبوب کی کملی میں چھپا دے
مدت سے میں ان ہاتھوں سے کرتا ہوں دعائیں
ان ہاتھوں میں اب جالی سنہری بھی تھما دے
عشرت کو بھی اب خوشبوئے حسان عطا کر
جو لفظ کہے وہ اسے تو نعت بنا دے

عشرت گودھروی

نعت رسول مقبول صلی اللہ علیہ وسلم
نام محمدصلی اللہ علیہ وسلم آنکھوں کی ٹھنڈک دل کی جلا
آئو ان کا ذکر کریں جو ہیں دافع رنج و بلا
جن کو ان کا قرب ملا ہے بن گئے ہادی و راہنما
سب پر ان کی چشم کرم ہے واہ رے شان جود و سخا
دیکھ کے اپنی فرد عمل کو عاصی جب شرمائیں گے
امت سے کچھ پیار ہے ایسا خود وہ کرم فرمائیں گے
ان پر اپنا تن من واروں، واروں حسن کون و مکاں
حاصل ان کے صدقے میں ہے عزت و عظمت نام و نشاں
محفل نعت کی بات نہ پوچھو شاہِ دنیٰ خود آتے ہیں
جس پر چشم کرم ہوجائے اس کے دن پھر جاتے ہیں
ان کی بھیک پہ سب پلتے ہیں جن و ملائک شاہ و گدا
در سے کوئی خالی نہیں لوٹا واہ رے شان جود و سخا
جب کوئی مشکل پیش آئی ہے دل نے انہیں پکارا ہے
انجم اپنا تو یہ یقین ہے ان کا کرم ہوجاتا ہے

قمر الدین انجم

Show More

Check Also

Close
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close