Hijaab Mar-18

بات چیت

مدیرہ

السلام علیکم و رحمتہ اللہ و برکاتہ

مارچ 2018ء کا حجاب حاضر مطالعہ ہے۔
ماہنامہ حجاب ہو یا ماہنامہ آنچل یہ دونوں جرائد آپ کے اپنے ہی ہیں‘ انہیں سجانے سنوارنے میں آپ ہمیشہ شامل رہتی ہیں آپ کی پسند ناپسند کا پورا پورا خیال رکھا جاتا ہے ہم کیسے صرف اور صرف اپنی منشاء و مرضی چلا سکتے ہیں‘ جن بہنوں کو یہ شکایت ہے کہ انہیں موقع نہیں دیا جاتا ان کی اتنی محنت سے لکھی کہانی کو رد کردیا جاتا ہے کچھ مخصوص لکھنے والیوں کو ہی موقع دیا جاتا ہے یا تو وہ آپ کی رشتہ دار ہوں گی یا کسی خاص سفارش کی وجہ سے انہیں ہمیشہ موقع دیا جاتا ہے ان کی کہانیوں کو زیادہ سے زیادہ شائع کیا جاتا ہے۔
میری پیاری بلکہ بہت ہی پیاری بہنوں ایسا ہرگز نہیں ہے اگر آپ کی کہانی شائع ہونے سے رہ جاتی ہے تو وہ اس لیے نہیں شائع ہوتی کیونکہ مجھے یا ادارے کے کسی فرد کو کسی دوست یا رشتہ دار کی کہانی کو جگہ دینی ہوتی ہے عزیزی بہن آپ سے بڑھ کر کون رشتہ دار ہوگا آپ کا ہمارا رشتہ تو حجاب و آنچل سے جڑا ہے اور بہت گہرا و دیرنہ تعلق ہے‘ رہی بات رشتہ داروں کی تو آپ یقین کیجیے ہماری کوئی رشتہ دار لکھاری نہیں اور نہ ہی کوئی سفارش کام آتی ہے ہاں کام آتا ہے تو آپ کی تحریر کا حسن اس کی روانی‘ اس کا مقصد، ہر ایسی تحریر جو قاری بہنوں کے لیے دلچسپی کا باعث ہو‘ جسے پڑھ کر لطف اندوز ہوسکیں‘ جس میں زندگی کا گہرا مشاہدہ پنہاں ہو وہ ضرور اپنی جگہ بنا لیتی ہے بلا کسی تخصیص کے ایسی تمام بہنوں سے گزارش ہے جن کی تحریر شائع ہونے سے رہ جاتی ہے یا ناقابل اشاعت قرار پاتی ہے انہیں چاہیے کہ اس تحریر کو دوبارہ سہہ بارہ خود پڑھیں یا کسی دوسری بہن بھائی کو پڑھوالیں ایسے میں آپ کو اندازہ ہوسکے گا کہ کیوں شائع ہونے سے رہ گئی۔ ہر جریدے کا اپنا ایک معیار ہوتا ہے الحمدللہ آنچل و حجاب آج جس مقام و منزل پر پہنچے ہیں اس میں آپ بہنوں کا بڑا حصہ ہے۔ اگر ہم اس کا اہتمام نہ کریں کہ آپ کو کیا پسند ہے کیا ناپسند تو ہم کب کے ڈوب چکے ہوتے ذرا سوچیے کہ ہم آج جس طرح آپ کے دلوں میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوسکے ہیں تو آخر کوئی تو وجہ ہے کہ آپ آنچل و حجاب کو پسند کرتی ہیں اگر ہر وہ تحریر جو ہمیں ملتی ہے شائع کردی جائے چاہے وہ قابل اشاعت ہو یا نہ ہو تو ہم کب کے مٹ چکے ہوتے آپ کب کی بھول چکی ہوتی آج جو بڑی بڑی لکھاری بہنیں ہیں ان سے تو ذرا دریافت کیجیے کہ ابتدأ میں کتنی تحریریں رد ہوئیں لیکن انہوں نے ہمت نہیں ہاری اور مسلسل ناکامیوں کو حوصلے سے برداشت کیا اور ہر بار ایک نئے عزم کے ساتھ میدان عمل میں آتی رہیں، المختصر اس طرح تو ہوتا ہے اس طرح کے کاموں میں حجاب و آنچل یقینا آپ کے اپنے جرائد ہیں آپ سے بڑھ کر کون ہمارا رشتہ دار ہوسکتا ہے امید ہے کہ تمام لکھاری بہنوں کو تسلی ہوئی ہوگی آئیں اب چلتے ہیں اس ماہ کے ستاروں کی جانب۔
}…اس ماہ کے ستارے…{
مریم مرتضیٰ، عابدہ سبین، نظیر فاطمہ، زارا رضوان، فرح طاہر، ہانیہ درانی، قرۃ العین سکندر، رشک حبیبہ، نائمہ غزل، یمنیٰ نور، فائقہ، اقرأ حفیظ۔

Show More

Check Also

Close
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close