Aanchal Nov-16

ہمارا آنچل

ملیحہ احمد

آنچل اسٹاف تمام قارئین اینڈ فرینڈزکو میرا پیار بھرا سلام۔ مابدولت کو ثوبیہ کہتے ہیں‘ میرا تعلق گوجرانوالہ کے گائوں مغل چک سے ہے‘ میں بی ایڈ کی اسٹوڈنٹ ہوں۔ پسندیدہ مضمون اردو ہے اور ان شاء اللہ اردو میں ماسٹرز کرنے کا ارادہ بھی رکھتی ہوں۔ آنچل تو سب کا پسندیدہ ہے لہٰذا مجھے بھی اس میں لکھنے کا شوق ہوا‘ کسی بھی شمارے میں پہلی دفعہ لکھ رہی ہوں۔ ہم پانچ بہنیں اور ایک بھائی ہے اور میرا نمبر پانچواں ہے۔ نماز کی پابندی کرتی ہوں‘ قرآن پاک کی تلاوت بھی کرتی ہوں‘ امی ابو سے بہت زیادہ پیار کرتی ہوں۔ اللہ تعالیٰ ہمارے والدین کا سایہ ہمیشہ ہمارے سروں پر سلامت رکھے‘ آمین۔ گھر میںسب سے زیادہ پیار اپنے بھائی سے کرتی ہوں (اکلوتے جو ہوئے)کاش میرے ایک سے زیادہ بھائی ہوتے‘ بھائی کی شادی کا بہت انتظار ہے۔ پسندیدہ رنگ سرخ اور گلابی ہے‘ کھانے میں بریانی بہت پسند ہے اور کوکنگ میں تو اے ون ہوں (ویسے کبھی غرور نہیںکیا)۔ کالج لائف انتہائی پسند ہے‘ میک اپ‘ جیولری اور شاپنگ کی بہت شوقین ہوں۔ تنہائی پسند ہوں اور ہاں رات کو سونے سے پہلے سوچنا بہت اچھا لگتا ہے۔ رشتوں میں سب سے پیارا رشتہ پھوپوکا ہے اور مجھے پھوپو بننے کا شوق ہے۔ بیسٹ فرینڈ عاصمہ بٹ ہے جو مجھے بہت عزیز ہے اور مجھے سب سے زیادہ انتظار اس کے آنے کا اور اس کی فون کال کا ہوتا ہے۔ ہماری دوستی کو پانچ سال بیت گئے اور ان سالوں کا ایک لمحہ بھی میں آج تک بھول نہیں پائی اور یہ دعا ہے ہماری دوستی کو کسی کی نظر نہ لگے۔ بارش کا موسم ہو اور دوست کا ساتھ ہو تو کیا ہی بات ہے اور ہم دونوں کی خوشی ایک دوسرے کے ساتھ سے ہی ہے۔ اپنی ہر بات ایک دوسرے سے شیئر نہ کریں کبھی ممکن ہی نہیں۔ دوستی کا ناطہ ہی ایسا ہے‘ دوستی میں ایک بہت ہی پیاری کشش ہوتی ہے‘ دوستی کرو تو جانو۔ شاعری کا شوق بھی رکھتی ہوں‘ پسندیدہ شاعر وصی شاہ‘ فراز اور فیض احمد فیض ہیں اور پسندیدہ سنگرز میںر احت فتح علی خان اور ندیم عباس ہیں۔ آنچل کی تمام رائٹرز بہت اچھا لکھتی ہیں بطور خاص سلسلے وار ناولز تو ٹاپ آف دی لسٹ ہیں۔ ایک اچھے پیغام کے ساتھ اجازت چاہوں گی میرے نزدیک دوستی کا رشتہ ہی پائیدار ہے لہٰذا دوستی کی آڑ میں کبھی کسی کا دل مت توڑیئے گا کیونکہ دل کے ٹوٹنے کی آواز نہیں ہوتی لیکن دکھ بہت ہوتا ہے‘ اللہ حافظ۔

ڈئیر قارئین السلام علیکم! کیسے ہیں جناب آپ لوگ؟ امید ہے آپ سب خیریت سے ہوں گے تو جناب اب آتے ہیں اپنے تعارف کی جانب (آہم) لو جی ہم سے ملئے ہم ہیں مسرت اسلم گھمن ‘ نک نیم وبرا گھمن ہے جو مجھے نہایت ہی پسند ہے۔ 7 جولائی کو اس دنیا میں تشریف لائی اور بی اے کی اسٹوڈنٹ ہوں۔ ہم پانچ بہن بھائی ہیں‘پہلا نمبر مابدولت کا ہے جی ہاں ہم ہیں ماما کی لاڈلی اور بابا کی جان (اپنے منہ میاں مٹھو نہیں سچ بات ہے) دوسرے نمبر پر ہیں شمائلہ اسلم گھمن جو 9th کلاس کی اسٹوڈنٹ ہیں پھر ہیں ناٹی بھائی نوید اسلم گھمن جو پانچویں کلاس کا اسٹوڈنٹ ہے‘ بہت شرارتی ہر کسی کو تنگ کرتے رہتے ہیں‘میرے ساتھ لڑائی کرنا فیورٹ ہابی ہے (مذاق میں)۔ اس کے بعد تیسرے نمبر پر ہیں مزہ گھمن جو کہ کلاس ٹو کے اسٹوڈنٹ ہیں‘ سب سے چھوٹی بہن فائقہ مہک ہے۔ دریائے راوی کے کنارے ایک خوب صورت سے گائوں فرید آباد میں رہتی ہوں جو ضلع ننکانہ صاحب میں واقع ہے۔ اب آتے ہیں جناب اپنی خوبیوں اور خامیوں کی طرف‘ بہت ہی حساس دل ہوں‘ کسی کو تکلیف میں دیکھ کر برداشت نہیں کرسکتی‘ خواہ کوئی جانور یا پرندہ ہی کیوں نہ ہو۔ خامی یہ ہے کہ غصہ بہت آتا ہے‘ غصہ میں اپنے آپ پر کنٹرول نہیں کرسکتی۔ کافی حد تک بولڈ ہوں‘ ایک بری عادت یہ بھی ہے جو دل میں ہوتا ہے فوراً بول دیتی ہوں چاہے بعد میں پچھتانا ہی پڑے۔ اب آتے ہیں پسند اور ناپسند کی طرف‘ جانور اور پرندہ پالنے کا بہت شوق ہے (پالتی بھی ہوں)۔ جیولری میں بریسلیٹ بہت پسند ہے۔ کلرز میں پنک اور بلیک بہت پسند ہے۔ کھانے میں بریانی‘ فرائیڈ رائس اور شامی کباب شوق سے کھاتی ہوں۔ جینز کے ساتھ لانگ شرٹ ‘ فراک پاجامہ شوق سے پہنتی ہوں اس کے علاوہ فیشن کے مطابق ڈریسنگ کرتی ہوں جس کی وجہ سے ویل ڈریس کہلاتی ہوں۔ کوکنگ کرنے کا بہت شوق ہے لیکن کبھی کی نہیں‘ سب کا خیال رکھنے کی حتی الامکان کوشش کرتی ہوں۔ ہم بہن بھائیوں میں بے حد محبت ہے‘ فرینڈلی ہوں اچھی نیچر کی مالک ہوں۔ میں ایک محبت کرنے والی لڑکی ہوں‘ میرے پاس محبت کے بہت سارے گلاب ہیں (یہ لیجیے سب ایک ایک)۔ اپنا اور خود سے وابستہ ہر چاہت کا خیال رکھیے گا‘ نائس فرینڈ شب کے لیے موسٹ ویلکم‘ مجھ سے ملنا کیسا لگا اگر دل چاہے تو ضرور بتایئے گا اور اب سب سے اجازت چاہتی ہوں‘ اپنا خیال رکھیے اور دعائوں میں یاد بھی رکھیے گا‘ اللہ حافظ۔

آنچل اسٹاف اور تمام قارئین کو میرا پرخلوص سلام‘ میں ہوں آپ سب کی دلکش مریم‘ سب جانتے ہیں نا؟ 24 اگست کو اس دنیا میں تشریف لائی ‘ گھر میں تیسرا نمبر ہے۔ مجھ سے بڑی دونوں بہنیں (سمیرا‘ حمیرا) شادی شدہ ہیں۔ مجھے اپنی بھانجیوں میرب اور ایمان سے بہت پیار ہے‘ مجھ سے چھوٹی دو اور بہنیں ہیں مزنہ اور ایمل۔ مزنہ میٹرک اور ایمل 8th کلاس کی اسٹوڈنٹ ہے۔ میری چاروں بہنیں حافظہ ہیں (ماشاء اللہ)۔ بھائی نہیں ہے‘ امی ہائوس وائف اور ابو جی پراپرٹی ڈیلر ہیں ساتھ میں ہمارا ڈیری فارم ہے۔ مجھے اپنے والدین سے بہت محبت ہے اللہ تعالیٰ میرے والدین کو لمبی زندگی عطا کرے‘ آمین۔ بی ایڈ کررہی ہوں آگے کیا کرنا ہے کچھ نہیں سوچا کہ بعض اوقات انسان جو سوچتا ہے وہ ہوتا نہیں‘ سنجیدہ مزاج ہوں ‘ بہت جلد کسی سے فری نہیں ہوتی۔ خوبیاں خامیاں سبھی میں ہوتی ہیں‘ مجھ میں بھی ہیں۔ خوبیوں میں رشتوں کو بہت اہمیت دیتی ہیں‘ غصہ آئے تو برداشت کرتی ہوں‘ جھوٹ بہت کم بولتی ہوں۔ خامیاں شاید زیادہ ہیں بعض اوقات چھوٹی سی بات پر غصہ آجاتا ہے لیکن میں غصے میں خاموش ہوجاتی ہوں‘ حساس ہوں چھوٹی چھوٹی بات محسوس کرتی ہوں جس پر سے اعتبار اٹھ جائے دوبارہ نہیں کرتی۔ معذرت کے ساتھ دوستوں پر بہت زیادہ اعتبار نہیں کرتی‘ کزنوں میں کزن تحریم کے زیادہ قریب ہوں۔ کھانے پینے میں نخرے نہیں کرتی‘ قمیص شلوار ساتھ لمبا دوپٹہ‘ چوڑی دار پاجامہ اور فراک پسند ہے۔ اچھی کتابوں کا مطالعہ کرنا پسند ہے اور آنچل تو بہت ہی پسند ہے‘ تمام رائٹرز بہت اچھا لکھتی ہیں۔ آنچل رائٹرز کے علاوہ اور رائٹرز بھی بہت پسند ہیں جن میں عمیرہ احمد‘ ماہا ملک‘ شازیہ چوہدری‘ نمرہ احمد وغیرہ شامل ہیں۔ میرا پسندیدہ رنگ سفید‘ نیوی بلیو اور ریڈ ہے۔ موسم سردی کا پسند ہے ‘ پینٹنگ کرنا اچھا لگتا ہے اور سمپل رہنا اچھا لگتا ہے۔ فریبی‘ دھوکے باز لوگ پسند نہیں‘ میوزک شوق سے سنتی ہوں اپنا ملک پاکستان بہت پسند ہے۔ اللہ تعالیٰ پاکستان کی حفاظت کرے‘ آمین۔ شاعری بہت پسند کرتی ہوں اس لیے شاعری کرتی بھی ہوں‘ اپنی شاعری کے ساتھ اجازت چاہوں گی‘ امید ہے آپ کو پسند آئے گی۔
میری زندگی میں
بس ایک لفظ
جس نے مجھے
حد سے زیادہ خوشی دی
اور دکھ بھی دیا بے تحاشا
وہ ایک لفظ ’’محبت‘‘
السلام علیکم! دنیا کی خوب صورت دوشیزائوں‘ میری بہنوں‘ بھائیو اور میرے بزرگوں! ارے میں تو تقریر کرنے ہی بیٹھ گئی‘ چلو چھڈو جی اپنا تعارف کراتی ہوں بقول میری سسٹر رابعہ کہ
ہم ہی دلبر ہیں
ہم ہی جان ہیں
ہم ہی دلیر ہیں
ہم ہی مہان
ہم ہی غیور ہیں
ہم ہی چٹان
میں ہوں بنگش
اور ہم ہیں پٹھان(حجاب خان بنگش)
عقل مندوں کے لیے یہ نظم ہی کافی ہے پھر بھی سمجھ نہ آئی ہو تو کوئی بات نہیں۔ سیدھے سے بتادوں مجھ معصوم سی پری وش کا نام کرن خان بنگش ہے اور میں بالکل اپنے نام کی طرح چمکتی ہوئی ہوں۔ 26 دسمبر کو جب ساری دنیا اندھیرے میں ڈوبی غنٹا غفیل تھی‘ کتا‘ بلی‘ گدھے گھوڑے بیچے تو مجھ پری وش نے اندھیرے میں کرنیں پھیلا کر اپنے آنے کا اعلان گلا پھاڑ پھاڑ کے کیا‘ ہاہاہا۔ آج تک منہ بند ہی نہیں ہوتا ٹوتھ پیسٹ کے اشتہار کی طرح‘ بگ بی کہتے ہیں کرن منہ بند کرکے دکھائو اور اسی کوشش میں اور منہ کھول دیتی ہوں قہقہوں کے ساتھ۔ ہنسنا مسکرانا سب کا دل لبھانا سب کو خوش کرنا میری گھٹی میں ہے۔ ہم سات بہنیں اور تین عدد بھائی ہیں میں ساتویں نمبر پہ ہوں دو بھائی اور ایک بہن مجھ سے چھوٹے ہیں۔ میں بچہ پارٹی میں گردانی جاتی ہوں‘ بے حد شرارتی ہوں خوب ہنگامے لگائے رکھتی ہوں‘ اب آنچل کی محفل میں آئی ہوں تو یقینا آپ سب کو فیل ہوا ہوگا ایسے
تُو نے ماری انٹریاں
تو دل میں بجی گھنٹیاں رے ٹنگ ٹنگ
ہے نا ایسا ہی… آپ یہ مت سمجھئے گا کہ پری وش پڑھتی وڑھتی کوئی نہیں ‘ جی نہیں میں پڑھتی ہوں اس سے پہلے کہ آپ کے ذہن میں کوئی اوٹ پٹانگ خیال آئے پٹھان کا سنتے ہی تو آپ کو کلیئر کردوں۔ ہم ایسے ویسے پٹھان نہیں جھگڑالو اور دوسرے ٹائپ کے‘ الحمدللہ ہم پر امن ‘غیرت مند اور پڑھے لکھے بہادر پٹھان ہیں یہ جو دہشت گردی کا ٹھپہ پٹھان کے نام پر لگا ہے غلط ہے‘ بہت غلط ہے کیونکہ حقیقت اس کے برعکس ہے کیونکہ نہ پنجابی‘ نہ پٹھان اور نہ سندھی اور نہ ہی بلوچی دہشت گرد ہیں بلکہ یہ کام تو ملک دشمن عناصر کا ہے جو مسلمان بہن بھائیوں کو لڑوانا چاہتے ہیں اور اسلام کو بدنام کرنا ان کا مشن ہے یہ میری ذاتی رائے ہے۔ مجھے فخر ہے کہ دنیا کے بے حد خوب صورت اسلامی ملک پاکستان کے پٹھان گھرانے میں پیدا ہوئی‘ چلیں آپ کو جیولری کا بتاتی ہوں۔ مجھے ٹاپس ‘ رنگ اور واچ بے حد پسند ہیں‘ بس ہلکی پھلکی سی چیزیں ہوں لیکن یونیک سی مجھے کپڑوں کابے حد شوق ہے اور میرے پاس بلکہ آس پاس ڈھیروں ڈھیر فینسی ڈریسز ہیں (ہاہاہا) اتنی تو بہنیں ہیں ماشاء اللہ ہر ایک کا وارڈ روب قیامت ہے‘ہر طرح کے سوٹ جو مجھے درکار ہوں مسکین سی صورت بناکر ہتھیالیتی ہوں۔ لمبی قمیص‘ چوڑی دار پاجامہ‘ لمبے دوپٹہ‘ فینسی میکسیز بہت پسند ہیں۔ فلیٹ سینڈلز اور ہائی ہیلز دونوں ہی پسند ہیں کسی کے بھی اچک لیتی ہوں‘ ہاہاہا۔ وہ الگ بات ہے کہ بعد میں وہی جوتی اکثر و بیشتر مجھ مسکین کو زوروں سے پڑ جاتی ہے‘ ہاہاہا۔ کتنی تو معصوم ہوں میں آپ ایگری کرتے ہیں نا‘ کھانے میں چائنیز ڈشز بہت پسند ہیں اور بریانی کی جگہ البتہ کوئی ڈش نہیں لے سکتی۔ مزے کی بات بتائوں‘ بریانی کا پہاڑ بنالیتی ہوں‘ ہاہاہا۔ ندیدی نہ سمجھنا نہیں تو… کھاتی اتنا ہوںکہ بقول نگار کے تین چار بندوں کا کھانا ہڑپ کرجاتی ہے کرن لیکن لگتا نہیں لیکن اس کی نسبت فریش جوس زیادہ پسند ہے۔ چٹخارے دار چنا چاٹ‘ فروٹ چاٹ ‘ گول گپے خوب چٹخارے لے لے کر کھاتی ہوں۔ میک اپ کرتے ہوئے لپ گلوس‘ کاجل اور مسکارا یوز کرتی ہوں کیونکہ مجھے باندری بننے کا کوئی شوق نہیں‘ میرا کلر ہی کھلتا ہوا سرخ وسفید سو زیادہ لیپا تھوپی سے اجتناب کرتی ہوں۔ ہم بہن بھائی آپس میں خوب ہلا گلا کرتے ہیں بلکہ یہ کہا جائے تو اچھا ہوگا کہ ہم سب کے ناک میں دم کردیتے ہیں۔ اپنے بھانجے بھانجی بہت اچھے لگتے ہیں‘ میری فرحت آپی کراچی میں ہوتی ہیں ان اور ان کے دونوں سیف اور عمر کو جلال‘ حجاب‘ عنایہ کو بھی بہت مس کرتے ہیں۔ شانیہ‘ سلمیٰ‘ بگ بی سب پڑھ رہے ہیں حمزہ‘ نگار‘ معاذ مجھ سے چھوٹے ہیں ‘ ہم لوگ کمرے میں اکٹھے ہوکر جب کراٹے کھیلتے ہیں تو بھونچال آجاتا ہے اور کراٹے کھیل کا اختتام کسی ایک کے زخمی ہونے پر ہوتا ہے‘ ہاہاہا اور بعد میں بڑوں کے ہاتھوں جو درگت بنتی ہے‘ ہاہاہا‘ ناقابل تحریر۔ سب سے پوچھا کہ میری خوبیاں بتائو سب کی ہنسی نکل گئی کہ خوبیاں یا خامیاں (ہائے رے قسمت)آٹھ آٹھ آنسو بہانے کے بجائے میں تو نہا دھوکر بندے کے پیچھے ہی پڑھ جاتی ہوں۔ بابا جان کا تو میں فخر ہوں اس بات پر مجھے فخر ہے‘ ہنسا ہنسانا مجھے اچھا لگتا ہے۔ کسی کی برتھ ڈے ہو میں سب سے پہلے وش کرتی ہوں‘ پہلے تو غصہ آتا نہیں جب آتا ہے تو بمشکل اترتا ہے۔ ایک بار جس سے اعتبار اٹھ جائے تو کلام بھی نہیں کرتی۔ جھوٹے لوگوں سے نفرت ہے اور ترس بھی آتا ہے‘ اچھی کتابیں پڑھنا بے حد اچھا لگتا ہے۔ پسندیدہ رائٹرز ہر اچھا مصنف فیورٹ بن جاتا ہے‘ ہاشم ندیم‘ نمرہ احمد‘ نگہت عبد اللہ‘ سمیرا شریف طور‘ عشنا کوثر سردار‘ نازیہ کنول نازی‘ عمیرہ احمد اور یاد نہیں آرہے۔ ناولز میں ’’عبدا للہ‘ مقدس‘ ایک محبت اور سہی‘ ایمان‘ امید اور محبت‘ خد اور محبت‘ امربیل‘ لاحاصل‘ پیر کامل‘ مصحف‘ بچپن کا دسمبر‘ پتھروں کی پلکوں پر‘ اور کچھ خواب‘ یہ چاہتیں یہ شدتیں‘ عشق کا عین‘ عشق شین اور عشق کا قاف۔ شاعری سے کوئی خاص لگائو نہیں۔ ایف ایم بہت شوق سے سنتی ہوں ‘ میری بیسٹ فرینڈز ‘ تنزیلہ‘ مریم اور رقیہ ہیں۔ بابا جانی اور بی بی گل سے بے حد محبت ہے‘ گرمیوں کا موسم بس ٹھیک ہی لگتا ہے ہاں البتہ سردیاں مزے کی لگتی ہیں۔ فروٹ میں آڑو‘ انگور‘ آم‘ بیر بلکہ تمام فروٹ اچھے لگتے ہیں۔ سبزیوں میں کدو‘ ٹنڈے‘ بینگن ناپسند ہیں۔ میں بولتی بہت ہوں یہ تو آپ کو میرے تعارف ہی سے معلوم ہوگیا ہوگا‘ خیر آپ سب ضرور بتایئے گا کہ میرا تعارف کیسا لگا۔ میں دعاگو ہوں اللہ ہمارے ملک کو اپنے حفظ و امان میں رکھے اور ہمارے دشمنوں کوپسپائی نصیب ہو‘ اللہ آنچل کو ترقی کی راہوں اور اونچائیوں پر پہنچادے جس کا تصور بھی کسی نے نہ کیا ہو‘ آمین ثم آمین۔سب محبت کرنے والوں کے نام:۔
اک بات کہوں گر ہوسکے
اپنا پیار تو سنبھال رکھنا
نہ لگے کسی کی نظر
اسے دل میں چھپا رکھنا
اک بات کہوں گر ہوسکے
تو…
خودی کو سنوار رکھنا
ہاتھوں پر حنا رچا رکھنا
کاجل آنکھوں میں لگا رکھنا
ہر پل یونہی بہار رکھنا
نہ آنے پائے پیار کے راستے میں
خزاں کا دور
چوکھٹ بند رکھنا
اک بات کہوں گر ہوسکے
تو…
ہر پل پیار کی پھوار رکھنا
نہ کبھی شک کی نمی برقرار رکھنا
بس…
ہونٹوں پر یونہی مسکان سجائے رکھنا
اک بات کہوں گر ہوسکے
کبھی نہ خود کو جدا رکھنا
ہمیں بھی یاد صدا رکھنا
اللہ حافظ۔

Show More

Check Also

Close
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close