Aanchal Mar 16

بیاض دل

میمونہ رومان

حرا قریشی بلال کالونی… ملتانی

تم سو گئے تو رات بھر سورج بجھا رہا
اب آنکھ کھول دو کہ ذرا روشنی تو ہو

رخ کومل شہزادی… سرگودھا

محسوس کیا تم کو تو گیلی ہوئی آنکھیں
بھیگے ہوئے موسم کی ادا تم تو نہیں ہو
ان اجنبی راہوں میں نہیں کوئی بھی میرا
کس نے یوں مجھے اپنا کہا، تم تو نہیں ہو

عقیلہ رضی… فیصل آباد

بہت تڑپایا ہے اس کی یادوں نے رات بھر
جیسے دیکھ کر دل کو چین ملتا ہے

نجم انجم… کراچی

تم دل لے گئے میرا آنکھیں بھی ساتھ لے جاتے
تیری تصویر سے کیسے نجم دل کو بہلائے

فیاض اسحاق… سلانوالی

زبان کا ورد ہوئے مگر دلوں میں گھر نہ ہوا
ہتھیلیوں پہ لکھے نام ہم سفر نہ ہوئے
عجب طریقہ ہے تجھ کو بھولنے کا
ہم تیری یاد سے اک پل بھی بے خبر نہ ہوئے

شمع فیاض… بستی بزدار

دل و جان سے زیادہ کروں گی حفاظت اس کی
بس اک بار وہ کہہ دے کہ میں امانت ہوں تیری

سمیرا سواتی… بھیر کنڈ

حسن یوسف کی قسم
چاہیں گے تجھ کو زلیخا کی طرح
تم ہمیں بھی تو خریدو
عزیز مصر کی طرح

اقرا احسان اعوان… فاروق آباد

بھول جانا تو رسم دنیا ہے وصی
تم نے بھول کر کون سا کمال کردیا

سعدیہ رمضان سعدی… 186 پی

وہ میرا ہو جو نگاہوں میں حیا رکھتا ہو
ہر قدم ساتھ چلنے کا عزم وفا رکھتا ہو

فرحت اشرف گھمن… سید والا

ظالم دنیا میں ذرا سنبھل کے رہنا
یہاں پلکوں پہ بٹھایا جاتا ہے نظروں سے گرانے کے لیے

عاصمہ اقبال عاصی… عارف والا

ہمیں مطلب نہیں احباب لمبی قطاروں سے
جو دل سے ہمارا ہو ہمیں وہ شخص کافی ہے

ایم فاطمہ سیال… محمود پور

کوئی ملا ہی نہیں جس کو وفا دیتے
ہر اک نے دھوکہ دیا کس کس کو سزا دیتے
یہ ہمارا صبر تھا کہ خاموش رہے
ورنہ داستاں سناتے تو محفل کو رلا دیتے

ساریہ چوہدری… ڈوگہ گجرات

کیا اس کا بھی جنازہ پڑھتی ہے دنیا اے زندگی
جنہیںموت سے پہلے محبت مار ڈالتی ہے

اقصیٰ زرگر، سنیاں زرگر… جوڑہ

اس کے مرنے پہ بہت لوگ جمع تھے عاطف
زندگی بھر جو ترستا رہا لوگوں کے لیے

نورین انجم… کراچی

دل کی آنکھوں سے کام لیتی ہوں
ان کے دامن کو تھام لیتی ہوں
دور ہوتی ہیں ساری مشکلیں
جب محمد  کا نام لیتی ہوں

حدیقہ صادق رانا… ہڈالی

اس نے مجھے مسلمان سے کافر بنا کر فقط اتنا کہا محسن
تم اپنے رب سے وفا نہ کرسکے ہم سے کیا کرو گے

مدیحہ نورین مہک… برنالی

تیرے خیالِ دیدار سے ہی رک جاتی ہیں سانسیں
خدا جانے جب تم رو برو ہو گے تو پھر کیا ہوگا

ارم کمال… فیصل آباد

بے حس ہیں یہاں لوگ بھلا سوچ کے کرنا
اس دور میں لوگوں سے وفا سوچ کے کرنا
اک بار جو روٹھے تو منا تم نہ سکو گے
ہم جیسے وفاداروں کو خفا سوچ کے کرنا

ودیعہ یوسف زماں قریشی… لانڈھی کراچی

چاہنے والے تو بہت ملے مگر
جسے ہم چاہ سکیں کوئی ویسا نہیں ملا
خواب میں تھامے تھے ہم چاند ہاتھ میں
آنکھ جب کھلی تو سورج ہمیں ملا

اقرا ماریہ… برنالی

ابھی بھی وقت ہے لوٹ آئو تم
بن تیرے جینا سیکھ لیا تو بہت پچھتائو گے تم

فضہ یونس… گنگا پور

محبت کیا ہے مت پوچھ اسے بس راز رہنے دو
یہ ایسا لفظ ہے جس کی وضاحت درد دیتی ہے

کرن شہزادی… مانسہرہ

یہ دل بہت اداس ہے جب سے خبر ہوئی
ملتے ہیں وہ خلوص سے ہر آدمی کے ساتھ

گل مینا خان اینڈ حسینہ ایچ ایس… مانسہرہ

کتنا عجب ہے دنیا والوں کا انداز محبت مینا
روز نیا زخم لگا کر کہتے ہیں خوش رہا کرو

سائرہ خان… محمد پور دیوان

میری پر نور سوچیں ہیں میری تحریر روشن ہے
نبی ﷺ کا ذکر کرتی ہوں، میری تقدیر روشن ہے

کوثر خالد جڑانوالہ… فیصل آباد

بساط دل پہ عجب ہے شکست ذات کا وہ لطف
جہاں پہ جیت اٹل ہو وہ بازی ہار کے دیکھو

ام عائشہ… وہاڑی

بات اگر شراب تک ہوتی تو نہ آتے تیرے مے خانے میں
یہ تیری نظروں کا جام ہے کمبخت کہیں اور نہیں ملتا

فریحہ شبیر… شاہ نکڈر

تیری یادوں کے قافلے اے ہمدم
میرے دل میں قیام کرتے ہیں

طیبہ سعدیہ عطاریہ… کھٹیالہ

مکتب عشق کے آداب سے تم واقف نہیں وصی
صرف پالینا ہی عشق نہیں فنا ہونا بھی عشق ہے

مصباح حسین میمونہ حسین… ڈیرہ غازی خان

میں ہر روز گناہ کرتی ہوں
وہ اپنی رحمت سے چھپاتا ہے
میں مجبور ہوں اپنی عادت سے
وہ مشکور ہے اپنی رحمت سے

نبیلہ ناز… قصور

اے دوست یہاں ویرانوں کو گلزار سمجھنا پڑتا ہے
کچھ اونچی اونچی راہوں کو ہموار سمجھنا پڑتا ہے
مہر و حق معیشت کے ہاتھوں انسان کا اب یہ عالم ہے
ہر زخم لگانے والے کو غمخوار سمجھنا پڑتا ہے

سمیہ کنول… مانسہرہ

بس اک شخص ضد ہے میرے دل کی
نہ اس جیسا چاہیے نہ اس کے سوا

اریبہ منہاج… ملیر کراچی

اس کی فطرت پرندوں سی تھی
میرا مزاج درختوں سا تھا
اسے آخر اڑ ہی جانا تھا!!!
مجھے قائم ہی رہنا تھا

Show More

Check Also

Close
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close