Hijaab Sep-16

بات چیت

مدیرہ

السلام علیکم و رحمتہ اللہ و برکاتہ!
ستمبر 2016ء کا حجاب حاضر مطالعہ ہے۔ تاریخ کے اوراق پلٹ کر دیکھیں تو پتا چلتا ہے کہ اسی ماہ یعنی 6 ستمبر 1965ء کو روایتی حریف بھارت نے پاکستان پر شب خون مار کر وطن عزیز پر غاصبانہ قبضہ کرنا چاہا تھا لیکن اس موقع پر ہماری جری و بہادر فوج نے دشمن کی کارروائیوں کا نہ صرف منہ توڑ جواب دیا بلکہ ہمیشہ کے لیے اسے یہ بھی باور کرا دیا کہ جو بھی وطن عزیز کی جانب میلی نگاہ سے دیکھے گا شکست سے دوچار ہوگا۔ نہ صرف افواج پاکستان نے اہم کردار ادا کیا بلکہ وطن عزیز کے محب الوطن لوگوں نے بھی جوش و جذبے عزم و استقلال کا مظاہرہ کر کے یہ بتا دیا تھا کہ آزادی کے متوالے لہو کے نذرانے پیش کر کے آزادی کے دیپ جلانے والے اپنے وطن کا دفاع کرنا بخوبی جانتے ہیں لیکن اس کے باوجود بھارت کی ہٹ دھرمی اور مختلف سازشیں اس بات کا ثبوت فراہم کرتی ہیں کہ آج انہتر سال گزرنے کے بعد بھی اس نے پاکستان کے وجود کو تسلیم نہیں کیا آج بھی ہماری آزادی آج بھی اسے کھٹکتی ہے اور یہاں بھی مقبوضہ کشمیر جیسے حالات پیدا کرنے کا خواہاں ہے جہاں پچاس دن گزر جانے کے بعد بھی کرفیو کا نفاذ اور نہتے کشمیریوں پر ظلم و ستم اور بربریت وحشت کا مظاہرہ بھارت کے روایتی تعصب و تنگ نظری کا ثبوت ہے۔ ایسے موقع پر عالمی برادری کی خاموشی تشویشناک ہے۔
دوسری طرف عازمین حج قافلوں کی صورت جوق در جوق کعبتہ اللہ میں حج جیسے مقدس فریضے کی ادائیگی کے لیے جمع ہو رہے ہیں جب لبیک اللھم لبیک کی صدائوں سے فضا بلند ہوتی ہے تو رنگ و نسل ، امیر و غریب عربی و عجمی کا فرق مٹ جاتا ہے۔ آج ضرورت اس امر کی ہے کہ نہ صرف حج کے مخصوص ایام میں بلکہ عالمی سطح پر دنیا بھر کے مسلمان، کلمہ گوبھائی متحد ہو کر حق کے لیے آواز بلند کریں بے شک اتحاد و اتفاق میں بڑی برکت ہے۔ آج ہمارے اس انتشار و تفریق کا فائدہ اغیار نے اٹھایا ہے اور طاغوتی طاقتیں اور سامراجی قوتیں اسلام کو مٹانے کے درپے ہیں۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ ہم پروردگار عالم کے اس فرمان پر عمل پیرا ہوجائیں۔
واعتصمو بحبل اللہ ولا تفرقو ’’اور اللہ کی رسی کو مضبوطی سے تھام لو اور تفرقے میں نہ پڑو۔‘‘ دعا گو ہوں اس پروردگار سے کہ یہ وطن عزیز ہم نے تیرے نام پر حاصل کیا آج اس کی حفاظت بھی تو خود فرما اور اسے ایک اسلامی ریاست بنا دے، آمین۔
تمام بہنیں نوٹ فرمالیں کہ حجاب نومبر کا شمارہ سالگرہ نمبر ہوگا جس کے لیے آپ بہنیں ابھی سے اپنی خصوصی تحاریر و تجاویز ارسال کرنا شروع کردیں تاکہ اس پہلی سالگرہ کا تحفہ بھرپور انداز میں آپ کو دیا جاسکے۔سروے کے سواالات اندر کے صفحات پر ملاحظہ فرمائیں۔
اب چلتے ہیں اس ماہ کے شمارے کی طرف
…}}}اس ماہ کے ستارے{{{…
شیشوں کا مسیحا
تحسین انجم انصاری شیشوں سے مسیحائی تلاشتی حاضر محفل ہیں۔
کانٹا
مرد کی تنگ دلی و بزدلی پر لکھی اقبال بانو کی مختصر و بہترین کاوش۔
خلش کے پار
بدگمانیوں اور نفرت کے درمیان پنپتی محبت کا احوال مصباح علی کے خوب صورت انداز میں۔
لمحۂ احتساب
سوشل میڈیا کے کریز میں مبتلا نسل نو کے لیے ایک مثبت پیغام لیے افشاں علی کا سبق آموز ناولٹ۔
پاکستان زندہ باد
قیام پاکستان کا پس منظر بیان کرتی حب الوطنوں کے لیے نیلم شہزادی کی عمدہ کاوش۔
نکمی
سماجی و معاشرتی خامیوں کو بے نقاب کرتا سمیرا غزل کا مختصر و پر اثر افسانہ۔
ماموں جی بس کردیں
سود و ربا میں ڈوبے ایسے شخص کی کہانی جس نے ہر رشتے کو کھو دیا ام ایمان قاضی کے منفرد انداز میں۔
شکستوں کا جال
بے نام و نشان منزل کی جانب بڑھنے والوں کے لیے شکست یقینی امر ہے صبا جاوید کا افسانہ۔
زیاں
تقدیر کے سود و زیاں سے الجھتے کرداروں کی کہانی سیدہ ضوباریہ کے دلکش انداز و پیرائے میں۔
سہیلی
ایک حرماں نصیب سہیلی کا حال بیان کرتی عالیہ حرا اپنے مخصوص انداز میں۔
اللہ اکبر
اللہ تعالیٰ کی ذات پر یقین کامل رکھنے والوں کی کہانی، عالیہ توصیف کی زبانی۔

Show More

Check Also

Close
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close