Hijaab Jan-16

ذکر اس پری وش کا

زینب احمد

میرا نام طیبہ ہے 28 مارچ کو دنیا میں تشریف آوری ہوئی‘ میرا تعلق اٹک سے ہے۔ اسٹار ایرز ہے جو کہ مجھے بہت پسند ہے جسے ڈسکس کرنے میں مجھے بے حد مزا آتا ہے خاص طور پر نازیہ باجی کے ساتھ۔ خزاں اور شاعری سے عشق ہے لیکن کوشش کے باوجود میں آج تک ایک مصرعہ نہیں لکھ پائی۔ شاعروں میں محسن نقوی پسند ہیں اور اس کے بعد ایک نئے ابھرنے والے شاعر جن سے ایک فیسٹیول میں ملاقات ہوئی تھی‘ موسٹ فیورٹ ہیں اور ان کی پوئٹری مجھے بہت اپیل کرتی ہے ۔ سوچنا‘ غورو فکر کرنا اہم ترین مشغلہ ہے‘ فطرتاً تنہائی پسند ہوں اور کسی حد تک خودغرض اور بے مروت بھی لیکن بھائی کی وفات کے بعد تو کافی چینج ہوگئی ہوں۔ اب سب کے ساتھ گھل مل جاتی ہوں‘ سوال رہا نیچر کا تو اردگرد موجود لوگوں کے اس جملے سے اندازہ کرلیں ’’طیبہ یار تمہیں سمجھنا بہت مشکل ہے‘ کوئی رائے قائم کرنا مشکل ہے پل میں تولہ پل میں ماشہ۔ تم سے بندہ کسی بھی وقت کچھ بھی ایکسپکٹ کرسکتا ہے۔‘‘ بات کرتے ڈر لگتا ہے کہ نجانے کیا کہہ دو‘ ساتھ ہی ایک عادت جو پتا نہیں خوبی کے زمرے میں آتی ہے یا خامی کہ کسی کو انکار نہیں کرسکتی‘ چاہے میرے بس کا کام نہ ہو۔ امی سے اس بات پر ڈانٹ بھی پڑتی ہے‘ ہر بات منہ پر کہہ دیتی ہوں کیونکہ مجھے منافقت پسند نہیں لیکن اس عادت پر اکثر منہ پھٹ کا خطاب ملتا ہے۔ سنی‘ مونا‘ سندس‘ روبی باجو اور حرا فرینڈز ہیں جن سے کبھی تعلقات بحال نہیں رہے (ہاہاہا)۔ اب تو سارے ہی خزاں رسیدہ پتوں کی طرح ادھر اُدھر بکھر چکے ہیں لیکن محبت قائم رہتی ہے نا۔ سائیکالوجی میں آگے جانا میرا خواب ہے‘ دلی جذبات شو نہیں کرتی جس کی وجہ سے بقول فرینڈ ز جتنی محبت اور کیئر وہ مجھے دیتی ہیں میں انہیں نہیں دیتی۔ ہر کسی پر اعتبار نہیں کرسکتی اور اب تو کسی پر نہیں کہ بعض اوقات انسان بہت غلط جگہ اعتبار کرکے پھر اسے کھودیتا ہے تو بہتر ہے کہ انسان کسی پر بھروسہ کرے ہی نہیں بس ضرورت کی حد تک ویسے بھی آج کے زمانے میں تو لوگ زندگی جینے کے بجائے گزار رہے ہیں کہ رشتوں کی احساس ہی اعتماد ہے اور اعتماد ہی کی عدم موجودگی ہو تو… لگتا ہے کچھ زیادہ ہی بونگیاں مار دیں‘ اینڈ میں دل دکھانے اور بھرم توڑنے والوں سے پوچھنا چاہوں گی کہ ایسا کرکے آخر ملتا کیا ہے اگر خوشی تو کیا دائمی… اگر نہیں تو پھر کیوں کرتا ہے ہر دوسرا انسان ایسا؟ ایک انسان دوسرے کے ہونٹوں پر مسکان کیوں زیادہ دیر ٹھہرنے نہیں دے پاتا؟ دعائوں میں یاد رکھیے گا‘ اللہ حافظ۔

ہم وہ ہیں جن کے آنے سے محفلیں سج جاتی ہیں
ہم یہاں پر آئے ہیں حجاب کو سجانے کے لیے
تاریخ پیدائش 11 اگست 1994ء ‘ اسٹار لیو‘ آہم… ہم آنچل کو سجانے آئے ہیں خیر تعارف آگے بڑھاتے ہوئے بتاتے چلیں کہ ہم آنچل کو عملی طور پر سجانے میں اپنا کردار اور کسی حد کامیاب ادا کررہے ہیں یہ آپ بھی اچھی طرح جانتے ہوں گے‘ تھوڑی بہت شاعری ہی فرمالیتے ہیں۔ رائٹر بننا میرا شوق ہے اور آنچل نے میرے اس خواب کو شرمندہ تعبیر کرتے ہوئے دوسروں کے سامنے شرمندہ ہونے سے بچالیا ہے تھینک یو آنچل۔ کچھ اپنی فیملی کے بارے میں آپ کو آگاہ کروں کیونکہ یہ بھی تو ضروری ہے ناں فیملی ہے تو میں ہوں‘ ہے ناں۔ میری فیملی کے سربراہوں میں موڈی سے ابو اور شوخ و خوش مزاج امی جو وقتاً فوقتاً سخت مزاجی کا مظاہرہ بھی کرلیتی ہیں شامل ہیں۔ ماشاء اللہ پانچ بھائی اور دو بہنیں ہیں‘ دو بھائی بڑے ہیں وقاص بھائی اور زیبی جسے کبھی بھائی کہنے کی توفیق نہیں ہوئی۔ مجھے ان دونوں سے خاص طور پر محبت ہے البتہ وقاص بھایا سے کلوز والی دوستی ہے‘ باقی چھوٹوں کا کیا ذکر کرنا کہ فی الحال ان کے شور سے لکھنا بھی محال ہورہا ہے۔بہنوں میں مترنم اور عائشہ ہے‘ مترنم سے کافی دوستی ہے اور عائشہ تو فی الحال چار سال کی ہے اور امی جان مجھے واقعی آپ سے بہت پیار ہے‘ پتا نہیں آپ کو یقین کیوں نہیں آتا۔ دوستوں کے معاملے میں بہت لکی ہوں‘ بہت مخلص دوستیں ملیں۔ سب سے پہلے فقیہ کا نام لوں گی‘ مجھے فخر ہے تمہاری دوستی پر۔ پھر سمیہ اعظم‘ سمیہ تم اور تمہاری دوستی میرے لیے بہت قیمتی ہے‘ مجھے تم سے محبت ہے‘ تمہاری شرارتیں بہت یاد آتی ہیں‘ آئی لو یو سو مچ۔ اس کے بعد مہوش‘ آصفہ‘ اصغر‘ صائقہ‘ عدیسہ‘ نائلہ‘ فرح‘ نیلم‘ فریحہ‘ ارم‘ زینب‘ ماریہ‘ اقراء وغیرہ وغیرہ کزنز میں کنزہ مریم اور انعم اظہر‘ دوستی اور محبت کا حسین امتزاج ہیں مجھے سب دوستوں سے بہت محبت ہے۔ میری پسند نا پسند کچھ خاص نہیں‘ خوامخواہ ہر کسی کے ساتھ فری ہونے والے لوگ پسند نہیں‘ باوقار اور مخلص لوگ پسند ہیں۔ باشعور اور محبت کرنے والے لوگ پسند ہیں‘ محبت پسند ہے آنچل سے وابستہ سب پریوں سے محبت ہے۔ ارے ہاں میں بی اے کی اسٹوڈنٹ ہوں اور یقینا تعارف کی اشاعت تک مکمل ہوچکا ہوگا آخر میں کہوں گی کہ خوشیوں کے مواقع ضائع مت جانے دو‘ زندگی بار بارنہیں ملتی جہاں سے خوشی ملے لے لو۔ سب کو محبت دو یقینا آپ کو بھی بہت محبت ملے گی‘ دنیا کو محبت کی ضرورت ہے اپنے اردگرد رہنے والوں کا ڈھیر سارا خیال رکھا کریں‘ ہمیشہ خوش رہیں‘ اللہ حافظ۔

’’او شٹ اسے بھی ابھی خراب ہونا تھا‘ ہاتھ کے اشارے سے گاڑی روکی‘
’’کیا مسئلہ ہے‘ مجھے یوں سڑک کے بیچ کھڑا کروادیا۔‘‘
’’وہ میری گاڑی خراب ہے۔‘‘
’’تو میں کیا کروں۔‘‘
’’آپ مجھے آگے تک چھوڑ دیں پلیز بڑی مہربانی ہوگی۔‘‘
’’بیٹھیے ‘میں ذرا جلدی میں ہوں۔‘‘
’’آپ کیا نام ہے؟‘‘
’’شمع مسکان۔‘‘
’’کیا کرتی ہیں آپ؟‘‘
’’زیاہ فری ہونے کی کوشش نہ کرو یہ بتائو جانا کہاں ہے؟‘‘
’’آنچل ولا۔‘‘
’’اوکے‘ کس سلسلے میں؟‘‘
’’اپنا انٹرویو دینے۔‘‘
’’او تو میں اب سمجھی انٹرویو جاب کے لیے دینا ہے۔‘‘
’’نہیں۔‘‘
’’اور کیا رشتے کے لیے دینا ہے؟‘‘
’’نہیں جی۔‘‘
’’اچھا تو شرما کیوں رہی ہو؟‘‘
’’آپ نے بات ہی ایسی کہی (ہاہاہا) سوری۔‘‘
’’لو آگیا آنچل ولا۔‘‘
ٹھک ٹھک ٹھک ’’کون ہے جی؟‘‘
’’زینب احمد سے ملنا ہے۔‘‘
’’بی بی تو سورہی ہیں؟‘‘
’’انہیں کہو سمیرا شریف طور آئی ہیں۔‘‘
’’اچھا… بی بی جی‘ بی بی جی ۔‘‘
’’کیا ہوا شگو؟‘‘
’’وہ باہر ایک لڑکی آئی ہیں اپنانام سمیرا شریف طور بتارہی ہے۔‘‘
’’انہیں بٹھائو میں آتی ہوں۔‘‘
’’السلام علیکم۔‘‘
’’وعلیکم السلام۔ آپ رائٹر سمیرا شریف طور ہیں۔‘‘
’’نہیں وہ تو آپ کا انتظار کرکے جاچکی ہیں‘ میں کرن ملک ہوں‘ اپنا انٹرویو دینے آئی ہوں۔‘‘
’’بی بی کچھ ٹھنڈا گرم لائوں؟‘‘
’’بی بی سے کیا پوچھ رہی ہو‘ لے آئو اور مہمان میں ہوں آپ کو مجھ سے پوچھنا چاہیے تھا۔‘‘
’’اچھا جی لاتی ہوں۔‘‘
’’اور ہاں سنو ہوسکے تو ٹھنڈا گرم دونوں لے آنا۔‘‘
’’جی زینب! میرا نام کرن ہے اورمیں پاکستان کے چھوٹے سے شہر جتوئی کے چھوٹے سے محلے چھوٹی سی گلی میں رہتی ہوں جو آپ لوگوں سے بہت دور ہے لیکن دلوں سے دور نہیں‘ کیوں زینب جی میں نے ٹھیک کہا نا‘ کیا آپ سن رہی ہیں۔‘‘
’’ہاں میں سن رہی ہوں لیکن آپ کی آنکھیں تو بند ہیں۔‘‘
’’میری آنکھیں بند ہیں کان تو بند نہیں۔‘‘
’’اچھا اچھا‘ ویسے آپ پر یہ کلر بہت اچھا لگ رہا ہے‘ مجھے تو میرون اور پنک کلر اچھے لگتے ہیں۔ ہماری کرکٹ ٹیم بھی ہے مطلب یہ کہ ہم گیارہ بہن بھائی ہیں‘ چھ بھائی پانچ بہنیں… بہنوں میں سب سے بڑی ہوں اور تین بھائیوں سے چھوٹی تین سے بڑی ہوں۔ کرکٹ سے یاد آیا مجھے کرکٹ دیکھنے کا بہت شوق ہے۔ جب ہم سب بہن بھائی اکٹھے ہوجائیں تو بہت ہلاگلہ کرتے ہیں‘ بہنوں میں سب سے بڑی ہونے کی وجہ سے چھوٹے بہن بھائیوں پر اچھا خاصہ رعب … نہیں ہے۔ آج کا تو زمانہ ہی الٹ ہے چھوٹے بہن بھائی بڑوں پر رعب جماتے ہیں۔ سردیوں کی شامیں بہت پسند ہیں‘ یکم جنوری کی ٹھٹھرتی رات کو اپنے آنگن میں روشنی کی کرن بن کر اتری۔ موڈی بہت ہوں‘ اپنے موڈ کے مطابق کام کرتی ہوں ویسے مجھے ہر کام کرنا آتا ہے‘ تھوڑی شرارتی اور ضدی بھی ہوں اور حساس بہت زیادہ ہوں۔ چھوٹی سی بات پر رونا آجاتا ہے سب سے بڑی خامی یہ ہے لوگوں پر جلد اعتبار کرلیتی ہوں‘ کافی لوگوں نے دل توڑا اب تو ڈاکٹر بھی جوڑ جوڑ کر تھک گیا ہے اور لاعلاج ہوگئی ہوں‘ ہاہاہا۔ کھانے میں ہر طرح کے چاول‘ آلو میتھی‘ گول گپے (آگیا نہ منہ میں پانی) اور سموسے پسند ہیں۔ ڈرنک میں اسٹرابری اور سپرائٹ پسند ہیں پھل تقریباً سب ہی کھالیتی ہوں‘ کپڑوں میں لانگ شرٹ ٹرائوزر اور ساڑھی پسند ہے۔ جیولری میں سب سے اچھی چوڑیاں لگتی ہیں‘ دوستوں میں سرفہرست نام یہ ہیں حفصہ‘ ثانیہ‘ نادیہ‘ سعدیہ‘ شاہ رخ اور سونیا ہیں۔یاد آیا ایک اور بھی ہے نیلی پیلی سوری یار نیلم نام ہے اس کا کھاتی اتنا ہے یار کیا بتائوں لیکن کھایا پیا لگتا نہیں وہی کمزورکی کمزور اور کام ایک نہ کروائو ‘ کام کی نہ کاج کی دشمن اناج کی۔ رائٹر میں نازیہ کنول نازی‘ سمیرا شریف طور‘ عشنا کوثر اور سباس گل پسند ہیں۔ موڈ کے مطابق میوزک سنتی ہوں‘ پانچوں وقت کی نماز ادا کرنے کی کوشش کرتی ہوں اور کامیابی بھی حاصل ہے زینب جی! اتنا کافی ہے یا اور بتائوں۔ ‘‘
’’کیا مطلب ہے پورے ڈائجسٹ میں ہم نے صرف تیرا انٹرویو چھاپنا ہے۔
’’نہیں۔‘‘
’’اوکے جاتی ہوں‘ اپنا خیال رکھنا‘ دعائوں میں یاد رکھنا۔ ‘‘

سب سے پہلے پیارے پیارے آنچل کی سویٹ سویٹ بہنوں کو میٹھا میٹھا سلام۔ ارے وعلیکم السلام تو کہہ دیں‘ یہ ہوئی نہ بات‘ اپنے بارے میں کچھ کہنا چاہوں گی اجازت ہے نا؟ جی تو میرا اور آنچل کا ساتھ تقریباً چھ سال پرانا ہے اور آنچل تو مجھے جی جان سے پیارا ہے‘ بہت شوق سے پڑھتی ہوں اور وہ بھی امی سے چوری‘ ویسے چوری چھپے پڑھنے کا اپنا ہی مزا ہے (ہے نا)۔ چلئے جی اب اپنی سویٹ بہنوں کو مزید انتظار کروائے بغیر بتاتی چلوں کہ مابدولت کو سحرش خان کہتے ہیں‘ پیار سے سحر‘ سحری اینڈ پارو۔ پارو نام پسندنہیں پھر بھی سب کہتے ہیں خیر کوئی بات نہیں۔ 26 ستمبر کی ایک سہانی شام کو ہوا کے دوش پر اڑتی اڑتی امی کی گود میں آکر گری۔ میں تھرڈ ائیر کی اسٹوڈنٹ ہوں‘ ہم سات بہن بھائی ہیں ‘ چھ بہنیں اور ایک بھائی۔ بڑی بہن انیلہ خان یونیورسٹی آف ہری پور سے بی ایڈ کررہی ہیں‘ باقی سمیرا نایاب‘ بشریٰ ارج‘ مصباح اریج اینڈ مبین‘ صداقت خان صاقی۔ مبین سب سے چھوٹی ہے جسے ہم سب پیار سے مانو کہتے ہیں‘ مانو بہت شرارتی اور پاپا کی بے حد لاڈلی ہے۔پاپا پاک آرمی این سی او ریٹائرڈ آفیسر اور امی پی ٹی سی ایل کی چیئرپرسن‘ دوست کوئی خاص نہیں۔ پاپا ہی ہم سب کے بہترین اور انمول دوست ہیں‘ ہر بات پاپا جانی سے شیئر کرتی ہوں۔ پسندیدہ شخصیت حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم اور قائد اعظم۔ کھانے میں بھنڈی‘ کڑھی پکوڑے‘ تکے چاول اور امی کے ہاتھ کے کریلے گوشت نہایت پسند ہیں رنگ سبھی اچھے لگتے ہیں‘ مہندی اور چوڑیاں بے حد پسند ہیں ‘ مہندی خود بھی لگالیتی ہوں۔ انسانی خوب صورتی میں لمبے بال بہت اٹریکٹ کرتے ہیں‘ خیر میرے اپنے بال بھی خوب صورت اور لمبے ہیں (اپنے منہ میاں مٹھو) طبیعت کے خلاف کوئی بات ہو تو بہت ہی غصہ آتا ہے پھر تو جو منہ میں آئے بول دیتی ہوں‘ بُری عادت دوسروں پر اعتبار بہت جلدی کرلیتی ہوں بہت بار اس کا نقصان بھی اٹھایا پھر بھی عقل نہیں آئی۔ پسندیدہ مشغلہ موویز دیکھنا اور آنچل پڑھنا۔ پسندیدہ رشتہ ماں باپ کا‘ سب سے زیادہ بھروسہ اللہ تعالیٰ کی پاک ذات کے بعد اپنے والدین پر کیونکہ والدین ایک ایسی ہستی ہیں جو کبھی بھی اپنی اولاد کا برا نہیں چاہتی اس لیے جتنا ہوسکے اپنے والدین کی عزت کریں۔ مجھے اپنی امی جان اور پاپا جانی سے بہت پیار ہے ان کے لیے کچھ بھی کرسکتی ہوں۔ ہمارے پاپا ہمارے لیے بہت محنت کرتے ہیں۔ گائوں میں رہنے کے باوجود ہمیں تعلیم جیسے انمول زیور سے آراستہ کیا‘ اللہ پاک میرے پاپا کو صحت و تندرستی والی لمبی زندگی عطا کرے‘ آمین۔ ہم سب اپنے پاپا کے ساتھ بالکل دوستوں جیسے ہیں‘ دوسرے دیکھ کر بہت حیران ہوتے ہیں۔ گھر کو سجانے اور گھر میں پھل پھول اور سبزیاں لگانے کا بے حد شوق ہے‘ کسی حد تک یہ شوق پورا بھی کرلیتی ہوں۔ میں ایک سلجھی ہوئی پیاری سی لڑکی ہوں (ہاہاہا جھوٹ نا)۔ خوابوں کی دنیا سے بہت دور حقیقت میں رہنے والی‘ دوسروں سے خوشی کی توقع رکھنے کے بجائے اپنے اردگرد خوشیاں تلاش کرتی ہوں۔ میرے لیے چھوٹی سی خوشی بھی بہت معنی رکھتی ہے جیسے دو گھٹنے بعد لائٹ آنے کی خوشی ‘ ہاہا۔ ویسے میں کھاتی بھی بہت ہوں ‘ راز کی بات بتائوں میری امی مجھے کہتی ہیں تم دنیا میں صرف دو کام کے لیے آئی ہو ایک کھانے دوسرا سونے۔ نوڈلز تو بے حد پسند ہیں‘ کھانے کو ملے نہ ملے بس نوڈلز ہی مل جائے تو میری تو سمجھو عید ہے۔ اپنے ساتھ سب بہنوں کو بھی نوڈلز کا شوقین بنادیا۔ چٹ پٹی چیزیں بھی بہت کھاتی ہوں‘ تعارف کچھ زیادہ ہی لمبا نہیں ہوگیا‘ پڑھ کر بتایئے گا ضرور میں آپ کو کیسی لگی اسی کے ساتھ اللہ نگہبان۔

Show More

Check Also

Close
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close