Aanchal Oct 15

سرگوشیاں

مدیرہ

السلام علیکم و رحمتہ اللہ و برکاتہ… تمام عالم اسلام کو عید الاضحیٰ مبارک ہو۔
اکتوبر ۲۰۱۵ء کا آنچل حاضر مطالعہ ہے۔
جس وقت آپ یہ سطور پڑھ رہی ہوں گی عید قرباں کی ساعتیں آ چکی ہوں گی اور آپ قربانی کے گوشت سے بھرے ڈیپ فریزر کو دیکھ دیکھ کر نئی نئی ڈشوں کے پروگرام بنا رہی ہوں گی (معذرت کے ساتھ) کیونکہ انسان انتہائی نا شکرا، پرلے درجے کا ندیدہ ہے۔ ورنہ عید الاضحیٰ تو صبر اور قربانی کا درس دیتی ہے۔ آپ دیکھیں کہ حج کے ہر رکن کے پیچھے اللہ تعالیٰ نے صبر، استقامت اور اطاعت کا جذبہ رکھا ہے۔ بھوک اور پیاس کی شدت سے بے حال حضرت حاجرہ علیہ السلام کا صفا و مروہ کے درمیان دوڑنے کے عمل کو اللہ تعالیٰ نے حج کا رکن بنا دیا۔ یہ صبر اور اللہ تعالیٰ پر ایمان کی استقامت تھی کہ وہی لق و دق صحرا میں پینے کو پانی اور خوراک مہیا کرے گا۔ اللہ تعالیٰ کے حکم پر حضرت ابراہیم علیہ السلام کا اپنے لخت جگر کو ذبح کرنے کا ارادہ و عمل اس کے حکم کی اطاعت، حلال جانوروں کی قربانی، یہ سب اللہ تعالیٰ کے پسندیدہ اعمال ہی تو ہیں مگر آج ہم نے ان اعمال کو مذاق بنا لیا ہے ہم میں کتنے ایسے ہیں جو ان اعمال کی روح کو سمجھتے ہیں۔ ہماری کوشش ہوتی ہے کہ ہم پورے کا پورا بکرا فریج اور ڈیپ فریزر میں بھرلیں چاہے ہمارا پڑوسی اس روز بھی بھوکا رہے اور اس کے گھر کا چولہا بجھا رہے تو بہنوں آپ عید کے روز نت نئی ڈشیں ضرور ٹرائی کریں نئے نئے کھانوں کی ترکیبیں آپ کو آنچل میں بھی مل جائیں گی لیکن خدارا اپنے غریب پڑوسیوں، عزیز و اقارب کے حقوق کا احساس ضرور رکھیں۔
ان شاء اللہ تعالیٰ نومبر میں نیا ماہنامہ ’’حجاب‘‘ آپ بہنوں کے ہاتھ میں ہوگا۔
اس ماہ کے ستارے
ترے عشق نچایا
محبت کے رنگ اجاگر کرتا نگہت عبداللہ کا انوکھا ناولٹ، محبت کرنے والوں کیلئے بطور خاص
مائے نی میں کنوں آکھاں
دکھوں کے سمندر میں غوطے کھاتی لڑکی کا فسانہ ،نازیہ کنول نازی کے قلم سے خوب صورت ناول
اور سفر کتنا باقی ہے
زندگی کی مسافت محبت کے جذبوں کو شکست نہیں دے سکتی، سیدہ ضوباریہ اپنے منفرد انداز تحریر کے ساتھ محفل میں حاضر ہیں
میرا روٹھا صنم
محبت کو مذاق قرار دینے والوں کا قضیہ،نادیہ فاطمہ کا سچے جذبوں کا عکاس ناولٹ
میرا نور بصیرت عام کردے
زندگی کی دوڑ میں انسان بہت کچھ بھول گیا ہے طلعت نظامی کے تجربہ کار قلم سے خوب صورت افسانہ
تیرا عکس میرے روبرو
اپنے آپ سے ناراض دوشیزہ کا خوب صورت افسانہ، نزہت جبیں ضیا کے قلم سے
زبان دراز
سچ کے سفر میں ٹھوکریں کھاتی لڑکی کا قصہ، جسے لوگوں نے زبان دراز قرار دے دیا تھا، صدف آصف کی خوب صورت تحریر
اے جذبہ دل
دل میں چھپے جذبوں کو آشکار کرتی رشک حبیبہ محفل میں موجود ہیں
نوازشوں کی تو کمی نہیں
اس میں کوئی شک نہیں اللہ کے گھر دیر ہے اندھیر نہیں، سچے جذبوں پر مبنی حمیرا نوشین کی تحریر
بٹّیا کا انگنا
بابل کے گھر سے رخصت ہو کر سسرال کو اپنا گھر سمجھنے والی فرح طاہر کی منفرد تحریر
مجسمہ ساز
اپنے تئیں خدا بن جانے والے کا قصہ پر درد، سمعیہ عثمان پہلی بار محفل میں موجود ہیں
قربانی
قربانی کے مفہوم سے روشناس کراتی ام ایمن نعیم پہلی بار محفل میں موجود ہیں

Show More
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close