Aanchal Jan-07

(رخشندہ جاوید (ھمارا آنچل

ملیحہ احمد

السلام و علیکم جناب ! میرا نام رخشندہ جاوید ہے اور پیار سے سب رخشی کہہ کر پکارتے ہیں۔ میرے والد صاحب جیولر ہیں اور والدہ ہائوس وائف ہیں‘ میرا تعلق لاہور سے ہے اور مجھے لاہور سے بہت محبت ہے۔ میں سپریئر یونیورسٹی کی طالبہ ہوں اور BBA کررہی ہوں ۔ ہم پانچ بہن بھائی ہیں تین عدد بھائی اور دو بہنیں ہیں۔ میںسب سے بڑی ہوں اس کے بعد یکے بعد دیگرے تین بھائی ہیں اور آخری میں بہن ہے جس کا نام ردا ہے۔ میرا اور آنچل کا تعلق دو سال پرانا ہے کبھی کبھی بیچ میں ڈنڈی بھی مار جاتی تھی اور آنچل میں لکھنا چھوڑ بھی دیتی تھی مگر عارضی طور پر ۔میں تو بھول ہی گئی کہ یہاں میرا تعارف ہورہا ہے تو سنیے میری تاریخ پیدائش ہے 19 اپریل 1988 ء اور اس لحاظ سے میرا اسٹار بنتا ہے (حمل) میرے فیورٹ شاعر ہیں فیض احمد فیض اور پروین شاکر مجھے شاعری سے کچھ اتنا خاص لگائو تو نہیں مگر اگر شاعری اچھی ہو تو پھر کون بدبخت ہے جو نا پڑھے ۔ سچی بات کروں گی پڑوسی ملک انڈیا کی موسیقی سنتی ہوں اور فاسٹ میوزک پسند ہے۔ فارغ وقت میں یا تو آنچل کا مطالعہ کرتی ہوں اور اگر غلطی سے کوئی اچھی کتاب ہاتھ لگ جائے تو پوری کی پوری پڑھ ڈالتی ہوں یا پھر فارغ اوقات میں آنچل میں لکھنے کے لئے بیٹھ جاتی ہوں۔ جناب مجھے تنہائی بالکل بھی پسند نہیں ہے۔
ہنگامہ اور شور شرابا پسند ہے اور اگر کبھی اداس ہوتی ہوں تو تھوڑی دیر کے لئے تنہائی میں چلی جاتی ہوں۔ مجھے اپنی شخصیت کے متعلق جاننے کا بڑا شوق ہے۔ کزنز وغیرہ سے مناسب حد تک دوستی ہے جو خوش دلی سے ملتا ہے اس سے خوش دلی سے ملتی ہوں اور جو خوش دلی سے نہیں ملتا اس سے بھی خوش دلی ہی سے ملتی ہوں۔
میرا سب سے بڑا مسئلہ یہ ہے کہ ہر کسی پر بہت جلد ہی اعتبار کرلیتی ہوں اور لوگ میرا اعتبار توڑ دیتے ہیں۔ اچھا اب چلتے ہیںآنچل کی طرف۔ آنچل بہت بہت بہت زیادہ پسند ہے خاص طور پر ’’محبت دل پر دستک‘‘ سلسلے وار ناول بہت پسند ہے۔
غلطی سے میں کوکنگ بھی کرہی لیتی ہوں۔ اور اکثر لوگ غلطی سے تعریف بھی کر دیتے ہیں۔ زندہ دل لڑکی ہوں۔ ہنسنا بولنا پسند ہے۔ اس کے علاوہ آپ کو ایک حیران کن بات بتاتی ہوں۔ مابدولت Advanture پسند ہیں۔ زندگی میں کچھ ایسا کرنا چاہتی ہوں جو کسی نے نہ کیا ہو اور لوگ مجھے یاد رکھیں۔
کمپئرنگ کا شوق ہے اور اس شوق کو بہت جلد پایہ تکمیل تک پہنچائوں گی۔ اپنی خالائوں اور پھوپو میں مجھے دونوں ہی پسند ہیں۔ خاص کر گڑیا پھوپو میری فیورٹ پھوپو ہیں اور جناب وہ پھوپو کم ہماری دوست زیادہ ہیں حالانکہ وہ شادی شدہ ہیں اور پانچ عدد بچوں کی اماں ہیں۔ بیبہ‘ فیبہ‘ اریبہ‘ سعد اور سب سے چھوٹی اور فیورٹ کزن ہے میری سعدیہ سب گھر والے اس کو سعدیہ کہتے ہیں۔ مگر میں اس کو انزلنا کہتی ہوں اور گڑیا پھوپو اس کو پوپٹ کہتی ہیں۔
مجھے سب خالائیں اچھی لگتی ہیں اس کے علاوہ مابدولت کی تین عدد چچیاں ہیں اور میری دوستی سب سے چھوٹی چچی سحر کے ساتھ ہے اور ان کی چار عدد بیٹیاں ہیں۔ مبشرہ‘ ایمن‘ نور اور سب سے پیاری خدیجہ۔ اس کے علاوہ خولہ چچی کے ساتھ بھی سلام دعا ہے۔ ان کے بھی پانچ عدد بچے ہیں۔ ہما‘ ربیعہ‘ یُسریٰ‘ عبداللہ اور مناحل۔ اب جاتے جاتے میں اپنے سارے ان کزنوں کے نام لکھنا چاہتی ہوں جو رہ گئے ہیں ورنہ بعد میں میرا سر کھائیں گے۔
صالحہ‘ عروج‘ طاہرہ‘ طلحہ‘ عبدالرحمن‘ عینی‘ جویریہ‘ شگفتہ‘ فری باجی‘ عماد بھائی‘ جواد بھائی‘ اعجاز بھائی‘ خرم بھائی‘ گڑیا باجی‘ ڈولی باجی‘ بشریٰ باجی‘ سحر باجی‘ کنول بلال اور میرے تینوں بھائی عابد‘ زاہد‘ ثاقب۔
تو جناب یہ تھا میرا تعارف امید کرتی ہوں کہ آپ میرے ساتھ ضرور بور ہوئے ہوں گے۔ اگر ہوئے ہیں تو کوئی بات نہیں۔ میں نے برا نہیں منایا اور اگر نہیں ہوئے تو میں کیا کرسکتی ہوں۔
اب اجازت چاہتی ہوں۔

اللہ حافظ‘ خدا حافظ اینڈ اللہ نگہبان ۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Check Also

Close
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close