Aanchal Aug-18

ہمارا آنچل

ملیحہ احمد

ارم حسن…نور پور
السلام علیکم آنچل والو! میرا نام تو آپ نے پڑھ ہی لیا ہوگا مگر چلو کوئی گل نئیں تو پڑھ لو جی تو میں ہوں ارم حسن سولہ جون انیس سوپچیانوے کو پنڈی گھیب کے ایک گائوں سورگ میں پیدا ہوئی اور دنیا کو چار سو چار چاند لگا دیے) پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے یہ میں کہہ رہی ہوں صرف لگائے نہیں ہے۔ پھر اپنے باپ دادا کے (خوب صورت) گائوں آگئے اور اب جوانی کی سیڑھی پر قدم رکھے ہوئے ہیں۔ ہم چار بہن بھائی ہیں بڑے بھائی مدثر جو جاب کرتے ہیں پھر میں ہوں بی اے کی اسٹوڈنٹ پھر مجھ سے چھوٹا مبشر ہے(جس کی آج کل مجھ سے ناراضگی چل رہی ہے) سب سے چھوٹی اور بہت ہی پیاری (باجی منو‘ رملا‘ ڈوڈو‘ قبرہ وغیرہ) ماریہ حسن صاحبہ ہیں بہت ہی نخریلی شہزادی میرے ابو حافظ قرآن ہیں اور میرے بڑے بھائی بھی حافظِ قرآن ہیں چھوٹی ماریہ ابھی حفظ کر رہی ہے دعا کریں وہ کامیاب ہوجائے آمین۔ اور میری پیاری سی جنت میری امی ہائوس وائف ہیں جو کہ ماسی شیداں کی پکی سہیلی ہیں (گھورو نہیں آج فرسٹ ٹائم آئی ہوں) جی تو اب آتی ہوں خوبیوں‘ خامیوں کی طرف خوبی ایک بھی نہیں ہے خامیاں بہت ہیں جن میں غصہ کرنا اور ضد کرنا بہت گندی عادت ہے۔ مجھے پیارے آقاﷺ کی شخصیت پسند ہے کتاب قرآن مجید‘ سارے رنگ اچھے لگتے ہیں بلکہ دھنک کے رنگ پسند ہیں۔ بارش اچھی لگتی ہے کیونکہ کہتے ہیں بارش میں دعائیں قبول ہوتی ہیں۔ میری بیسٹ فرینڈ نرگس شاہین (لیلیٰ جی) آجائو واپس لاہور سے پلیز شمائلہ شازیہ نصیر احمد‘ زبیدہ حیات ثمن اگر پڑھ رہی ہو تو میں تمہیں نہیں بھولی۔ سائرہ لیلیٰ ثمن والی ہیں ساری رائٹرز پسند ہیں لکھنا بہت کچھ چاہتی ہوں مگر ڈر ہے مجھے ردی کی ٹوکری کاحصہ نہ بنادیا جائے۔ اور مجھے صباء زرگر کا تعارف بہت اچھا لگا شازی کا بھی… سب اپنا خیال رکھیے گا اور دعائوں میں یاد رکھیے گا آخر میں (اس) اپنے پسندیدہ شعر کے ساتھ اجازت چاہوں گی۔
کبھی یوں ہوا کہ تیری یاد نے مجھے سب کچھ بھلا دیا
کبھی یوں ہوا کہ تیری یاد نے مجھے میرے رب سے ملا دیا
طاہرہ یاسمین… پاک پتن
السلام علیکم! میرا نام طاہرہ یاسمین ہے جو کہ مجھے بہت پسند ہے میں 4اپریل2000 ء میں ایک روشن سورج کی طرح اپنے گھر کے آنگن میں طلوع ہوئی اور ابھی تک اسی طرح گھر کو روشن کیے ہوئے ہوں(آہم پسندیدہ) چیزوں کی طرف آئیں تو غروب ہوتا سورج بہت پسند ہے۔ سچے لوگ بہت پسند ہیں فطرت کی خوب صورتی بھی بہت اچھی لگتی ہے۔ بارش میں نہانا اور کشتیاں چلانے کا جنون ہے سرخ اور سفید رنگ بہت پسند ہے۔ سادگی پسند ہوں‘ چوڑیاں مہندی پسند ہیں اور کھانے میں مچھلی اور بریانی پسند ہیں۔ شاعری اور ادب میں میری جان ہے۔ ناپسندیدہ چیزوں کی طرف جائیں تو جھوٹ اور منافقت سخت ناپسند ہیں اس کے علاوہ کچھ بھی ناپسند نہیں۔ خوبیوں کی طرف جائیں تو مجھے اپنے منہ میاں مٹھو بننا اچھا نہیں لگتا‘ لیکن کوئی بات نہیں دو منٹ کے لئے بننے میں کوئی حرج نہیں ہے ناں۔ سات بہن بھائیوں میں آخری نمبر پر ہونے کی وجہ سے یا سب کی تربیت کا اثر ہے کہ ہر ایک کی کوئی نہ کوئی خوبی یا کمی میرے اندر موجود ہے ہر جگہ دوست بہت جلدی بنالیتی ہوں۔ چہرہ دیکھ کر کچھ کچھ اندازہ ہوجاتا ہے کہ کون کتنے پانی میں ہے۔ رشتے داروں سے بہت محبت ہے اور میرے خیال میں رشتے دنیا کی بہت بڑی نعمت ہیں۔ بچپن میں جب میں پانچ سال کی تھی تو ابو وفات پاگئے تھے میری امی نے دن رات ایک کرکے ہمارے لیے محنت کی جب میرے ابو کی وفات ہوئی تو میں نرسری میں تھی اور اب اس وقت میں سیکنڈ ایئر کے پیپر دے چکی ہوں‘ میری امی نے ہمارے لئے جتنی محنت کی اس کا بدلہ میں ان کو کبھی نہیں دے سکتی اور اس کے بعد میرے بھائی جنہوں نے نہ کبھی دھوپ دیکھی نہ چھائوں مگر ہمیں ہمیشہ چھائوں میں رکھا‘ میرے لبوں پر جب بھی ان کا نام آتا ہے پلکیں ادب سے جھک جاتی ہیں‘ اچھا کچھ زیادہ سیریس ہوگئے اب خامیوں کی بات کرتے ہیں اپنی خامیوں کے لیے تو میں پورا دیوان لکھ سکتی ہوں‘ کتنی اچھی بچی ہوں ناں (آہم) سب سے بڑی خامی یہ ہے کہ اگر کوئی سو رہا ہے تو میری موجودگی میں وہ سو نہیں سکتا یہ ہی نہیں کوئی بھی بندہ کوئی بھی کام میری موجودگی میں آرام سے نہیں کرسکتا۔ لاپرواہ ہوں ہر لحاظ سے چاہے وہ میری صحت کا معاملہ ہو یا کوئی اور۔ میں نے پہلے ہی کہا تھا کہ خامیاں بہت زیادہ ہیں اور اگر میں لکھنے بیٹھ جائوں تو شام ہو جائے اور آپ لوگ بور ہوکر اٹھ جائیں گے۔ ایک اور بات میری زندگی صرف ایک لائن کے گرد گھومتی ہے ’’نائو اور نیور‘‘ اصول پسند بھی ہوں زیادہ گھورنا اچھا نہیں ہوتا چلی جاتی ہوں‘ صبر کریں میں سب کو سلام کہوں جو اس وقت میرا تعارف پڑھ کر گھو رہے ہیں اور جو مسکرا رہے ہیں کزنز کو سلام خاص طور پر صوفیہ کو۔دوستوں میں ایمن سعدیہ‘ سحرش‘ سندس‘ فاطمہ‘ کرن فاطمہ‘ عظمی‘ عابدہ‘ سونیا‘ صفیہ اور میری پیاری بہت پیاری دوست نمبرہ کو سلام اور باقی جن کے نام یاد نہیں آرہے ( سوری) ان کو بھی سلام اور اب ایک پیاری سی بات کے ساتھ اجازت چاہوں گی۔ ’’ہمیشہ دوسروں کی خوشی کی وجہ بنو حصہ نہیں اور دوسروں کے غم کا حصہ بنو وجہ نہیں۔‘‘
مسکان… گوجرانوالہ
آنچل کے تمام قارئین‘ رائٹرز اور اسٹاف کو میرا پر خلوص اور محبت بھر سلام قبول ہو‘ اور آنچل کا آنگن ہمیشہ خوشیوں سے بھرا رہے‘ ارے ارے سانس تو لینے دیں‘ کھڑے کھڑے ہی سب کچھ بتادوں بیٹھنے کی جگہ ملے گی کیا‘ اوہ شکریہ۔ ارے حیران کیوں ہو رہے ہیں‘ آپ لوگوں نے مجھے نہیں پہچانا۔ پہچانیں گی بھی کیسے‘ میں نیو قمر جو ہوں اور لوگ مجھ نا چیز کو مسکان کے نام سے بلاتے ہیں‘ جنوری کی ٹھنڈی اور خاموش راتوں کو پر رونق بنانے کے لیے گوجرانوالہ کے ایک خوب صورت گائوں میں پیدا ہوئی۔ ہمارے گائوں کی سب سے اچھی بات یہ ہے کہ جب کوئی مشکل ہو تو سب اکٹھے ہوکر اس کا مقابلہ کرتے ہیں۔ میرا اسٹار دلو ہے لیکن میں ان پر یقین نہیں رکھتی۔ ہم تین بہن بھائی ہیں۔ دو بھائی ہیں اور میں ایک ہی بہن ہوں اور سب کی لاڈلی ہوں اب تو میرے پیار کو بانٹنے کے لیے میری کزن (ایمان) بھی آگئی جو چار سال کی ہے۔ سترہ سال تک میں نے اکلوتی ہونے کا بھر پور فائدہ اٹھایا۔ اور اس کی اتنی ہمت تو دیکھئے میرے ابو کو وہ بھی ابو بلاتی ہے تایا کہنے کا تو تکلف ہی نہیں کرتی۔ پڑھائی میں ہم تینوں بہن بھائی بہت اچھے ہیں ہمارے والدین کو کبھی بھی ہماری طرف سے پریشانی نہیں ہوئی۔ اب بات ہوجائے خامیوں کی تو مجھ میں دو خامیاں ہیں ایک تو کسی کی بھی بات کا فوراً یقین کرلیتی ہوں چاہے سچ ہو یا جھوٹ۔ اور دوسری جذباتی اور غصیلی ہوں مجھے غصہ بہت جلدی آتا ہے۔ پہلے تو بھائیوں پر نکال لیتی تھی‘ مگر اب رو کر نکالتی ہوں۔ خوبیوں کے بارے میں بتاتی ہوں حساس ہوں‘ خاموش طبع ہوں اور کوکنگ کرنے کا بہت شوق ہے اور کرتی بھی ہوں‘ میرے بھائی مجھ سے فرمائش کرکے کھانے پکواتے ہیں۔ سردیوں کا موسم اچھا لگتا ہے دوست تو بہت ہیں لیکن سب سے اچھی دوست میری امی ہیں وہ گھریلو خاتون ہیں۔ کھانے میں سب کچھ پسند ہے دال اور سبزیاں مسلسل کھاسکتی ہوں‘ لیکن گوشت زیادہ دن نہیں کھاسکتی۔ میک اپ کا بہت شوق ہے لیکن فنگشنز میں کرنے کا۔ جیولری میں ہلکے پھلکے ٹاپس اور نازک سی چین پہنتی ہوں اور کانچ کی چوڑیاں بھر بھر کے پہنتی ہوں۔ موڈ کے مطابق سونگز سنتی ہوں۔ آنچل سے تعلق تب جڑا جب میں دسویں میں تھی۔ ایک آنچل ہاتھ لگا تو اسے پڑھا اس میں سمیرا شریف طور کا ناول ’’ یہ چاہتیں یہ شدتیں‘‘ چل رہا تھا‘ بس پھر کیا تھا آگے پیچھے کی ساری قسطیں پڑھ لیں اور یوں آنچل سے ایک تعلق سا بن گیا۔ جب آنچل ملتا تو جب تک سارا نہ پڑھ لوں تب تک سکون نہیں ملتا تھا چاہے ایگزیم سر پر ہوں۔ نصاب کی کتاب میں چھپاکر پڑھتی تھی اور جب مما کو پتہ چلتا تھا تو بہت ڈانٹ پڑتی تھی۔ میری موسٹ فیورٹ رائٹرز سمیرا شریف طور‘ نازیہ کنول نازی‘ اقرا صغیر احمد ہیں باقی بھی بہت اچھا لکھتی ہیں۔ آنچل کے سب ہی سلسلے زبردست ہوتے ہیں۔ ایک آنچل تو میں ایک دن میں ہی پڑھ لیتی ہوں۔ آپ نے حجاب کا سلسلہ جو شروع کیا بہت ہی زبردست ہے۔ زیادہ سے زیادہ پڑھنے کو ملے گا اور آخر میں اس بات کے ساتھ اجازت چاہوں گی جب فاصلے بڑھ جائیں تو غلط فہمیاں بھی بڑھ جاتی ہیں اور پھر وہ بھی سنائی دیتا ہے جو کہا ہی نہ ہو۔ خوش رہیں اور خوش رکھیں دوسرے لوگوں کو۔ لکھنے کو بہت کچھ ہے لیکن تعارف لمبا ہوجائے گا۔ اجازت چاہتی ہوں اور دعا ہے کہ اللہ رب العزت آپ سب کو صحت کاملہ عطا فرمائے (آمین) اللہ حافظ۔
اسریٰ… گوجرانولہ
السلامُ علیکم! دوستو! میرا نام اسریٰ ہے ویسے میری فرینڈز مجھے ’’وشز گرل‘‘ بھی کہتی ہیں‘ مجھے اپنا نام بہت زیادہ پسند ہے‘ میرے نام کا مطلب ہے ’’بہت دور سفر کرنے والی‘‘ میں چار اگست انیس سو پچانوے کو لاہور میں اتوار کے دن پیدا ہوئی اس لیے میرا اسٹار اسد ہے‘ آپ کو پتہ ہے اسد king of stars ہے۔ جیسے میرا اسٹار ہے‘ میں ویسی ہی ہوں‘ میں فورتھ ایئر میں پڑھتی ہوں‘ الحمد للہ قرآن پاک کا ترجمہ بھی پڑھا ہوا ہے اور فلاور میکنگ کورس بھی کیا ہواہے اس لیے اچھے اچھے فلاورز بھی بنالیتی ہوں۔ مجھے تین بار بیسٹ اسٹوڈینٹس ایوارڈ‘‘ ملا ہے۔ اور میری امی کو میری وجہ سے دور دفعہ ’’بیسٹ مدر ایوارڈ‘‘ ملا ہے۔ مجھے پڑھے لکھے لوگ بہت انسپائر کرتے ہیں‘ میری پسندیدہ شخصیات بہت زیادہ ہیں۔ آر جے نوید بھی میری پسندیدہ شخصیت ہیں‘ آپ سوچ رہے ہوں گے آر جے نوید کون ہیں۔ آر جے نوید میرے موسٹ فیورٹ آر جے ہیں۔ اگر آپ بھی ان کو سننا چاہیں تو سن سکتے ہیں۔ ایم ایم ایک سو چھ یہ ہفتہ‘ اتوارآٹھ سے دس بجے رات شو کرتے ہیں۔ میںا ن کی گریٹ فین ہوں‘ میں جب بھی ان کے شو میں میسج کرتی ہوں تو اپنی پسند کا سونگ پلے کرواتی ہوں۔ پہلے پلے کردیتے تھے لیکن اب نہیں کرتے بس یہ کہہ دیتے ہیں۔آئی ول ٹرائی۔ آر جے نوید اپنے شو کے لاسٹ میں یہ بات بولتے ہیں جو مجھے بہت پسند ہے کہ ’’زندگی بہت خوب صورت ہے لیکن صرف احساس کی ضرورت ہے۔ زندگی میں احساس پیدا کیجئے یقیناً آپ کو زندگی بہت خوب صورت نظر آئے گی۔‘‘ کتنی اچھی بات ہے ناں!!!
تڑپ اے دل
تڑپنے سے دل کو قرار آتا ہے
میری ہر تڑپ کے ساتھ
میرے محبوب کا نام آتا ہے
انا پرست تو ہم بھی غضب کے ہیں لیکن
تیرے غرور کا احترام کرتے ہیں
میرے پسندیدہ اشعار ہیں مجھے سردی اور خزاں کا موسم پسند ہے۔ پیر کامل ﷺ‘ عمیرہ احمد‘‘ اور جان ’’شاہینہ چندا مہتاب‘‘ میرے فیوٹ ناولز ہیں انگلش زبان میں مجھے اوکے اور نائس کے لفظ بہت اچھے لگتے ہیں کیونکہ میری ٹیچرز نے میرے لیے نائس لفظ بہت استعمال کیا ہے۔ میں سعودی عرب میں ہمیشہ کے لیے رہنا چاہتی ہوں۔ آنچل سے میرا تعلق چھ سال پرانا ہے۔ میں سادگی کو پسند کرتی ہوں ویسے مجھے بیوٹی بھی بہت اٹریکٹ کرتی ہے مجھے قدرتی مناظر بہت اچھے لگتے ہیں۔ جیولری میں مجھے بریسلیٹ بہت پسند ہے اور بلیک کلر مجھے بہت پسند ہے۔ خامی مجھ میں یہ ہے کہ میں اعتبار بہت جلد کرلیتی ہوں‘ ویسے میں دنیا میں کسی بندے پر اعتبار نہیں کرتی‘ لیکن پھر بھی لڑکیوں پر کرلیتی ہوں‘ جس کی وجہ سے مجھے نقصان بھی اٹھانا پڑا ہے۔ میری کزنوں (ایس اور این) کے پوائنٹ آف ویو کے مطابق مجھ میں غصہ بہت زیادہ ہے۔ میں غصے میں کچھ بھی نہیں دیکھتی اور خوبی یہ ہے کہ میں ہر ایک کے ساتھ مخلص ہوں‘ لیکن جب دوسرا بندہ مخلص نہ ہو تو پھر بہت غصہ آتا ہے اور سب کا احترام کرتی ہوں اور احترام کروانا پسند کرتی ہوں ارے!! اپنی فرینڈز کا تو میں نے ذکر کیا ہی نہیں ہاں‘ نویدہ‘ خضریٰ‘ ثناء ماریہ‘ فائزہ‘ انیسہ‘ آمنہ‘ عائشہ‘ عمارہ میری بہت اچھی فرینڈز ہیں‘ میں اپنے تعارف کے ذریعے آر۔جے نوید کو Birthday وش کرنا چاہتی ہوں‘15 ستمبر کو ان کی برتھ ڈے ہے۔ آر جے نوید آپ جہاں رہیں خوش رہیں‘ میری دعائیں آپ کے ساتھ ہیں۔
آپ جسے چاہیں وہ آپ کی جاگیر ہوجائے
ہرخوشی آپ کے مقدر میں تحریر ہو جائے
مانگنی نہ پڑیں آپ کو خوشیاں
ہر خوشی آپ کے ہاتھوں کی لکیر ہوجائے
اوکے فرینڈ اللہ حافظ! اگر کوئی بات بری لگی ہو تو اس کے لیے معذرت اور مجھے اپنی رائے سے ضرور نوازیے گا کہ آپ کو میرا تعارف کیسا لگا۔اوکے اللہ حافظ۔

Show More

Check Also

Close
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close