Hijaab Apr-18

بات چیت

مدیرہ

السلام علیکم و رحمتہ اللہ و برکاتہ!

اپریل 2018ء کا حجاب حاضر مطالعہ ہے۔
زندگی کی بھاگ دوڑ میں انسان اب اپنے سگے رشتوں کو بھی پیچھے چھوڑنے یا کترا کر نظر بچانے پر مجبور ہوگیا ہے‘ خود غرض بن گیا ہے کہ مہنگائی کا رونا روتے ہر رشتے کو نبھانا فرض کی جگہ مجبوری نظر آرہی ہے پہلے کی بات لیتے ہیں یعنی کچھ وقت پیچھے چلتے ان حالات کا جائزہ لیں تو کم آمدنی میں بھی لوگ گزارہ کر رہے تھے کیوں؟ کیا مہنگائی ان کے لیے نہیں تھی اخراجات ان کے بھی تو زیادہ تھے جہاں دس بچے ایک چھت کے نیچے رہتے تھے اس کے علاوہ والدین اور بہن بھائی بھی جوائنٹ فیملی کی شکل میں ایک ہی چھت تلے خوشی اور اطمینان بھری زندگی بسر کرتے تھے کمانے والا ایک اور کھانے والے دس یا اس سے زیادہ۔ مہنگائی تو اس وقت بھی تھی‘ مہنگائی تو اب بھی ہے وجہ یہ ہے کہ محبت اور بھائی چارہ نہیں رہا جس کی وجہ سے ہم بہت سے مسائل کا شکار ہوگئے ہیں اور یہ مسائل ہمارے اپنے پیدا کردہ ہیں ان سے نہ ہم نظر چرا سکتے ہیں اور نہ ہی کنٹرول کرسکتے ہیں وجہ دوسروں کی حرص میں ہم اپنی ہی چادر سے پائوں باہر نکال رہے ہیں اس کے پاس مہنگا موبائل ہے میرے پاس نہیں اس کے گھر میں نیٹ‘ کمپیوٹر اور جانے کیا کچھ ہے لیکن میرے پاس نہیں اور یہ ہی باتیں ہمیں آگے نکلنے پر تو اکساتی ہیں لیکن ساتھ ہی ہماری سوچ اور دل کو دوسروں کی طرف سے تنگ کردیتی ہیں ایسا کیوں ہے کہ سب کچھ ہونے کے باوجود ہمارے دل میں اپنوں کے لیے وسعت نہیں رہی کسی پہلو سکون نہیں رہا بات ساری یہی ہے کہ ہم نے اپنوں کا ساتھ چھوڑا ہے ان کے ساتھ اٹھنا بیٹھنا کھانا پینا یہاں تک کہ اب تو حال پوچھتے بھی ہم سوچتے ہیں کہ کہیں بدلے میں وہ اپنی کوئی مجبوری ظاہر نہ کردے اور ہم سے مدد طلب نہ کرلے کتنی ہی ایسی اور باتیں ہیں جن کا الزام ہم مہنگائی کو دیتے ہیں مہنگائی کا زور اسی صورت ٹوٹے گا جب ہم اتفاق سے رہیں گے ایک دوسرے کی ضرورت کو سمجھیں گے۔
آپ قارئین بہنیں بھی کہیں گی کہ میں کیا باتیں لے کر بیٹھ گئی دل کی بات تھی جو آپ سے کہہ دی اب حجاب کے حوالے سے بات ہوجائے۔ آپ سب کے تعاون سے الحمدللہ حجاب ترقی کی شاہراہ پر محوسفر ہے اور آپ کی شرکت ہمارے لیے باعث مسرت بنتی ہے اسی طرح آپ ہر ماہ شرکت کرتی رہا کریں تاکہ آپ کی آمد سے حجاب کے حسن میں اضافہ ہو‘ ان شاء اللہ مئی کا شمارہ رمضان نمبر اور جون کا شمارہ عید نمبر ہوگا اس لیے تمام بہنیں اس مناسبت سے اپنی نگارشات ارسال کریں اور مصنفین بھی عید اور رمضان کے حوالے سے اپنی تحریریں بیس اپریل سے پہلے ارسال کردیں‘ اب بڑھتے ہیں اس ماہ کے ستاروں کی جانب۔
{…اس ماہ کے ستارے…}
سدرہ فریال‘ نسرین رانا‘ حمیرا قریشی‘ سنبل خان‘ سمینہ عثمان‘ نورین مسکان‘ خدیجہ جلال

Show More

Check Also

Close
Back to top button
error: Content is protected !!
×
Close