Aanchal Jan-07

درجواب آں

ایڈووکیٹ سعدیہ ہما شیخ‘ بہاولپور کینٹ سعدیہ ڈیئر۔ ایڈووکیٹ بھی بن گئیں اور ہمیں خبر بھی نہ ہوئی۔ اتنی لا…

Read More »

فرائض سے کوتاہی

ایک کسان جب زمین میں دانہ ڈالتا ہے تو اس کا دل و دماغ اس ایک دانے کے پھوٹنے‘ اس…

Read More »

(رخشندہ جاوید (ھمارا آنچل

السلام و علیکم جناب ! میرا نام رخشندہ جاوید ہے اور پیار سے سب رخشی کہہ کر پکارتے ہیں۔ میرے…

Read More »

حتیم حسین

جن شہروں میں گہری ٹھنڈی چھائوں والے سرتاپارحمت کا پیکر بوڑھے برگد‘ نفرت کی اس زہریلی سفاک ہوا کی زد…

Read More »

محبت دل پہ دستک

محبت روح میں اترا ہوا موسم ہے جاناں تعلق ختم کرنے سے محبت کم نہیں ہوتی بہت کچھ تجھ سے…

Read More »

افسون جاں

اب کے یوں دل کو سزا دی ہم نے اس کی ہر بات بھلادی ہم نے ایک ایک پھول بہت…

Read More »

دشت آرزو

اک تعلق کی استواری ہے زیست تم بن فقط گزاری ہے یہ تماشا بھی دیکھتے جاؤ اپنی باری کا کھیل…

Read More »

جوریگ دشت فراق ہے

بن تمہارے ہے‘ شہر اتنا اداس تا سحر‘ میں دیے جلاتا ہوں سرمئی شام جب بھی آتی ہے میں اداسی…

Read More »

اسے ٹوٹ کر چاہاہم نے

زندگی میں کچھ نہ ملا تو کیا غم ہے آپ کی دوستی ملی‘ کیا کم ہے تھوڑی سی جگہ مل…

Read More »

بدل گئےموسم

جو بچھا سکوں تیرے واسطے‘ جو سجا سکیں تیرے راستے میری دسترس میں ستارے رکھ‘ میری مٹھیوں کو گلاب دے…

Read More »
error: Content is protected !!
Close